امریکہ نے شام کے ایک سائنسی ریسرچ سینٹر کے271 ملازمین پر پابندیاں عائد کر دیں

واشنگٹن:امریکی حکومت نے حال ہی میں کیمیائی گیس کے استعمال کا بہانہ بنا کر شام کے سرکاری سائنسی ادارے سائنٹیفک اسٹڈیز اینڈ ریسرچ سینٹر کے 271ملازمین کے خلاف پابندیاں عائد کر دیں۔ امریکہ اس ریسرچ سینٹر کو ہی اس ماہ کے اوائل میں شام میں استعمال کی جانے والی زہریلی گیس کو کیمیاوی اسلحہ کی شکل دینے کا ذمہ دار سمجھتا ہے۔ یہ271ملازمین ریسرچ سینٹر کے 2012سے جاری کیمیاوی اسلحہ پروگرام کے لیے کام کر رہے تھے۔۔امریکی حکام کا کہنا ہے کہ شام پر نئی پابندیاں بشار حکومت اور اس کے اتحادیوں کے خلاف جاری کریک ڈاون کا حصہ ہیں۔نئی پابندیوں کی وجہ سے بشار اسد کو مختلف ممالک کی جانب سے دی جانے والی امداد کا بھی خاتمہ ہو جائیگا۔واضح رہے کہ امریکی حکومت کی جانب سے مبینہ طور پر شام کی حکومت پر لگائے کیمیائی حملے کے الزام کے بعد شام پر میزائلوں سے حملہ کیا گیا تھا اور اس حملے کے صرف کچھ دنوں بعد ہی اب بشار حکومت کے خلاف سخت پابندیاں لگا دی گئیں ہیں۔واضح رہے کہ بشار الاسد نے اس الزام کی تردید کی ہے کہ انہوں نے کوئی گیس حملہ نہیں کرایا ہے۔ دوسری جانب عالمی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ دوسری جنگ عظیم میں جس امریکہ نے جاپان پر ایٹم بم سے حملہ کر کے لاکھوں لوگوں کو ہلاک کر دیا تھا وہ اب انسانی حقوق کے تحفظ کا دعویدار بھی بنا ہوا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Us sanctions 271 syrian workers after chemical attack in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply