امریکہ کا آزاد کشمیر پر ہندوستان کے دعوے کی حمایت کرنے سے انکار

واشنگٹن: امریکہ نے آزاد کشمیر پر ہندوستانی دعوے کی حمایت کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کشمیر کو ایسا تنازعہ مانتا ہے جسے ہندوستان اور پاکستان کو ہی مل کر ہی طے کرنا ہوگا۔اپنی یوم آزادی تقریر میں ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی نے ہندوستانی کشمیر میں جاری فوجی بربریت کا تو کوئی ذکر نہیں کیا اور اس کے بجائے پاکستان پر الزام لگایا کہ آزاد کشمیر اور بلوچستان کے لوگوں کو کچل رہا ہے۔
ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان خطوں کے لوگوں پر ظلم و زیادتی کے لیے پاکستان کو بین الاقوامی برادری کو جواب دینا پڑے گا۔پیر کی سہ پہر میں ایک ہندوستانی صحافی نے امریکی وزارت خارجہ کے شعبہ نشر و اشاعت کی ڈائریکٹر ایلزبتھ ٹروڈیو سے مسٹر مودی کے خیالات پر تبصرہ کرنے کہا تھا۔ اور یہ بھی کہا تھا کہ اب وقت آن پہنچا ہے کہ امریکہ ان لوگوں کے حق میں آواز اٹھائے جنہیں اظہار خیال کی اجازت نہیںدی جارہی ۔
اس صحافی نے ایلزبتھ کو اس امر کی بھی یاد دہانی کرائی کہ ہندوستانی وزیر اعظم نے اپنی وزارت خارجہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس معاملہ کو بین الاقوامی سطح پر اٹھائے۔محترمہ ایلزبتھ نے کہا کہ وہ مودی کے تبصروں پر کوئی تبصرہ نہیں کرنا چاہتیں۔
وہ جو چاہے بول سکتے ہیں۔ جہاں تک امریکہ کے موقف کا تعلق ہے تو سبھی جانتے ہیں کشمیر پر اس کے موقف میں کوئی تبدیلی واقع نہیں ہوئی ہے۔کشمیر پر مذاکرات کس رفتار پر ہونے چاہئیں کتنے فریقوں کو مابین ہونے چاہئیں اور کس طریقہ سے ہونے چاہئیں یہ سب طے کرنا ہندوستان اور پاکستان کا کام ہے ۔ اور یہ دونوں ممالک ہی اس قضیہ کا تصفیہ کرنے کے ذمہ دار ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Us refuses to back modis claims in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply