امریکہ شکست کے دہانے پر ہے:طالبان کے اعلیٰ مذاکرات کار کا دعویٰ

واشنگٹن: طالبان کے مذاکرات کار اعلیٰ نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکہ شکست کے دہانے پر ہے اور جلد ہی افغانستان چھوڑ دے گا۔

امریکہ کے نیم سرکاری خبر ادارے وائس آف امریکہ نے رپورٹ دی ہے کہ شیر محمد عباس اسٹانکزئی نے قطر کے دارالخلافہ دوحہ میں ایک طالبانی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یا تو امریکہ خود ہی افغانستان چھوڑ دے گا یا پھر اسے زبردستی نکال دیا جائے گا۔

مسٹر اسٹانک زئی نے ان خیالات کا اظہار امریکی رابطہ کاروں کے ساتھ تازہ مذاکرات میں ایک طالبانی وفد کی قیادت کرنے سے محض دو روز پہلے کیا تھا۔

طالبان نواز سوشل میڈیا نے امریکی خصوصی سفیر زلمے خلیل زاد کے دوحہ میں طالبان نمائندوں سے ہفتہ بھر چلنے والے مذاکرات کے ایک روز بعد مسٹر اسٹانک زئی کی تقریر کا ویڈیو جاری کیا۔

ویڈیو میںمسٹر استانک زئی کو ماضی میں اپنے ملک پر برطانیہ اور سوویت یونین کے حملوں کے خلاف مزاحمت کر کے انہیں شکست دینے اور حال میں غیر ملکی فوجوں کا ڈٹ کرمقابلہ کرنے و الی افغان قوم کی شجاعت کی تعریف کرتے سنا جا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اللہ بزرگ و برتر نے گذشتہ صدی کی دو بڑی طاقتوں کو شکست دینے میں ہماری مدد کی۔اور فی الحال جس تیسری بڑی طاقت سے ہم نبرد آزما ہیںوہ بھی شکست کے دہانے پر ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Us on verge of defeat claims chief taliban negotiator in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.