افغان پہاڑیوں پر اب تک کا سب سے بڑا بم گرانے کے بعد امریکہ کے قومی سلامتی مشیر افغانستان پہنچے

کابل:افغانستان میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کو ہدف بنا کر گذشتہ ہفتے کئے گئے غیر نیوکلیائی بموں میں سب سے بڑا بم گرانے کے بعد امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے قومی سلامتی کے مشیر جنرل ایچ آرمیک ماسٹر نے کابل میں صدر اشرف غنی سمیت مختلف ا فغان حکام سے ملاقات کی۔ امریکی سفارت خانے کی جانب سے جاری بیان کے مطابق اتوار کو ملاقات کے دوران افغانستان کے صدر اشرف غنی، قومی سلامتی کے مشیر حنیف اتمر اور دیگر اعلی سطحی افغان حکام نے’دہشت گرد گروپوں کے خلاف مشترکہ کوششوں‘کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا۔ افغانستان میں اے بی سی نیوز سے بات کرتے ہوئے مسٹر میک ماسٹر نے کہا کہٹرمپ انتظامیہ افغانستان میں طالبان، داعش اور اس کے معاون گروپوں کی سفارتی، فوجی صلاحیت اور اقتصادی طاقت کا پتہ لگا رہی ہے۔
ہمارے دشمنوں کو اس بات کا احساس ہے اور انہوں نے ان کی کوشش کو بڑھا دیا ہے لیکن یہی مناسب وقت ہے جب ہم اپنے ساتھی افغانستان کے ساتھ مل کر ان کو کرارا جواب دے سکتے ہیں وہیں افغانستان کے صدر دفتر نے ٹویٹ کرکے کہا کہدونوں فریقوں نے دو طرفہ تعلقات، سیکورٹی، دہشت گردی اور ترقی پر تبادلہ خیال کیا۔ قابل ذکر ہے کہ مسٹر ٹرمپ کے اقتدار میں آنے کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب کسی اعلیٰ سطحی امریکی اہلکارنے افغانستان کے صدر اشرف غنی کے ساتھ ملاقات کی۔ یہ اجلاس ایسے وقت ہو رہا ہے جب افغانستان کے ننگرہار صوبے میں امریکہ نے گذشتہ ہفتے داعش کو نشانہ بنا کر تقریبا 10 ٹن وزنی بم گرایا تھا، جس میں داعشکے 36 دہشت گرد مارے گئے تھے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Us national security adviser visits afghanistan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags: , ,

Leave a Reply