امریکی اسلامی تعلقات کونسل نے اورلینڈو خونریزی کی سخت مذمت کی اور داعشیوں کو گمراہ بتایا

واشنگٹن: کونسل برائے امریکی اسلامی تعلقات نے فلوریڈا میں اورلینڈو ہلاکتوں کی شدت سے مذمت کی اور ان الزامات کے بعد کہ بندوق بردار کو انتہا پسند تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے ارکینسے ترغیب ملی تھی،داعش میں شامل افراد کو گمراہ قرار دیا۔کونسل کے ڈائریکٹر نہاد عواد نے اتحاد و یکجہتی کی اپیل کرتے ہوئے سیاست دانوں کو تلقین کی کہ اورلینڈو خونریزی کو سیاسی رنگ دیں اور نہ ہی اس کا فائدہ اٹھائیں۔
یہ نسلی تشدد کی واردات ہے۔اور ہم اس کی پر زور انداز میں مذمت کرتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہاس خونریزی سے امریکی و مسلمان کے طور پر ہمارے اصولوں کی خلاف ورزی ہوئی ہے ۔مٰن یہ واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ ہم کسی بھی قسم کی انتہا پسندی کو برداشت نہیں کر سکتے۔ایف بی آئی کا کہنا ہے 29سالہ عمر متین کے بارے میں ،جو پولس کے ساتھ فائرنگ کے تبادلہ میں مارا گیا،کہا جاتا ہے کہ اس نے فائرنگ سے 20منٹ پہلے911پرکال کر کے داعش سے اظہار وفاداری کیا تھا۔
دریں اثنا عمر متین کی سابق بیوی نے کہا کہ وہ نفسیاتی مریض تھا اور نہایت جذباتی، ذہنی طور پر پریشان اور پر تشدد ذہنیت کا مالک تھا۔وہ زیادہ تر خامو ش رہتا تھا اور لوگوں سے زیادہ ربط ضبط نہیں رکھتا تھا۔اس کی بیوی سیتورا یوسفی نے مزید کہا کہ دوران ازدواجی زندگی عمر متین اس سے وقتاً فوقتاً بدسلوکی کرتا رہتا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Us muslim leader condemns orlando attack slams extremists in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply