امریکی کانگریس اراکین نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کیا

ہوسٹن:ایسے دور میں جب دہشت گردی کے حوالے سے پاکستان پوری دنیا میں بدنام  ہے، اور دنیا میں جب بھی پاکستان کا نام لیا جاتا ہے تو دہشت گردی کا لفظ سامنے آجاتا ہے، امریکی رکن کانگریس شیلا جیکسن کی قیادت میںکانگریسیوں کے ایک گروپ نے پاکستان کے سفیر متعین امریکہ اعزاز چودھری سے ملاقات کر کے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی قربانویں کا اعتراف کیا گروپ میں دیگرکانگریس اراکین ال گرین اور باٹو او رورکی ن شامل تھے۔
میڈیا کے مطابق اعزاز کے ساتھ اس گروپ کی یہ ملاقات کیپیٹل ہل میں پاک امریکہ دوستی کے70سال مکمل ہونے پر منعقد ہونے والے سیمینار کے دوران ہوئی ۔جس میں خطاب کرتے ہوئے امریکی رکن کانگریس شیلا جیکسن نے پاکستان کے حق میں صدائے حق بلند کرتے ہوئے پاکستان کی دہشت گردی کے خلاف دی جانے والی قربانیوں کا ببانگ دہل تذکرہ کیا۔اپنے خطاب میں شیلا جیکسن کا کہنا تھا کہ یہ کہنا غلط ہے کہ پاکستان دہشت گردی کو سپورٹ کرتا ہے ، بلکہ پاکستان سب سے زیادہ دہشت گردی سے متاثر ہوا ہے اور سب کو ان قربانیوں کا اعتراف کرنا چاہیئے۔
انہوںنے مزید کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ دہشت گردی سے سب سے زیادہ متاثر بھی پاکستان ہے اور سب سے زیادہ دہشت گردی کے خلاف قربانیاں بھی پاکستانی عوام اور پاک فوج نے دی ہیں۔انہوں نے امریکی معاشرے کی ترقی میں پاکستانی کمیونٹی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی کمیونٹی نے ہمارے معاشرے کے لیے کارھائے نمایاں انجام دیئے ہیں۔مسئلہ کشمیر کی طرف اشارہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ امریکہ مسئلہ کشمیر کا حل کرانے کے لیے بھر پور اپنا کردار ادا کرے گا۔

Title: us lawmakers call on aizaz in houston assure support | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply