اسد حکومت نے ایک فوجی جیل میں خفیہ طور پر 13ہزار قیدیوں کو پھانسی چڑھایا: ایمنسٹی کی رپورٹ

جنیوا:انسانی حقوق کی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا ہے کہ شامی حکومت دمشق کے نزدیک ایک فوجی جیل میں 13 ہزار قیدیوں کو پھانسی د ے چکی ہے نیز وہاں قیدیوں کو بڑے منظم انداز میں ایذائیں دی جارہی ہیں۔ ایمنسٹی کا کہنا ہے کہ ان لوگوں کو 2011 سے 2015 کے درمیان موت کے گھاٹ اتارا گیا اور یہ سلسلہ غالباً اب بھی جاری ہے اور یہ جنگی جرائم کے مترادف ہے۔
اس نے اقوام متحدہ کے ذرائع سے اس کی مزید تفتیش کرائے جانے کی اپیل کی ہے جس نے پچھلے سال اسی طرح کی ایک رپورٹ پیش کی تھی اس میں بھی متعدد عینی شاہدین کی گواہیوں کی بنیاد پر الزام لگائے گئے تھے۔ شامی حکومت اور صدر بشار الاسد وہاں جاری جنگ کے دوران ایذائیں دئے جانے اور ماؤرائے عدالت اجتماعی طور پر موت کے گھاٹ اتارے جانے کی اسی طرح کی رپوٹوں کی ماضی میں بھی مسترد کرتے رہے ہیں اس خانہ جنگی میں اب تک لاکھوں جانیں جاچکی ہیں۔ تاہم شام کی وزارت انصاف نے اس کی تردید کرتے ہوئے ایمنسٹی کی اس رپورٹ کو بھی غلط بتایا اور کہا کہ اس میں کوئی سچائی نہیں ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Up to 13000 secretly hanged in syrian jail says amnesty in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply