شامی شہر حلب میں خونریزی کرنے والوں کو اقوام متحدہ جنگی مجرم قرار دے سکتی ہے

اقوام متحدہ:شام کے مختلف شہروں خاص طور پر حلب میں گہرے ہوتے جارہے بحران پر اقوام متحدہ میں کافی تشویش کا اظہار کیا جارہا ہے اور اس ضمن میں اقوام متحدہ کے دو افسران بالا نے سلامتی کونسل سے کہا ہے کہ شام کے شہر حلب کے اسپتالوں پر حملوں اور اشیائے ضروریہ کی ناکہ بندی کرنے والوں پر جنگی جرائم کے لیے مقدمات چلائے جانے چاہئیں۔
15رکنی کونسل کا گذشتہ روز اجلاس ہوا جس میں حلب کی ناگفتہ بہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور دوسری جانب امریکہ اور روس نے حلب پر متواتر دو ہفتہ سے جاری حملے بند کرنے کے لیے جنگ بندی میں توسیع پر اتفاق کر لیا۔اقوام متحدہ کے ایک اعلیٰ افسر جیفری فیلٹ مین نے کہا کہ ایک بار بھی وہ یہ بات صاف صاف کہہ دینا چاہتے ہیں کہ اسپتالوں پر ارادتاً اور براہ راست حملے جنگی جرائم ہیں۔
اور جنگ کے دوران غذائی ناکہ بندی جنگی جرم ہے۔فیلٹ مین نے مطالبہ کیا کہ جنگی جرائم کے مقدمات چلانے کے لیے شام کا معاملہ ہیگ میں واقع بین الاقوامی فوجداری عدالت کو بھیج دیا جائے۔
واضح رہے کہ2014میں بھی ایسی کوشش کی گئی تھی لیکن اس وقت چین اور شام کے حلیف روس نے ویٹو کر دیا تھا۔ اس لیے اس بار بھی اس بات کی کوئی ضمانت نہیں ہے کہ اس مطالبہ کو حمایت ملے گی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Un warns of war crimes over aleppo carnage in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply