شام میں 10 لاکھ افراد تنہائی، بھوک اور طبی و انسانی امداد سے محروم کر دیے گئے: اقوام متحدہ

اقوام متحدہ:اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ شام میں تقریبا 10 لاکھ لوگ یرغمالیوں کی زندگی گزار رہے ہیں جو گذشتہ سال کے مقابلے میں دوگنی ہے۔ شام میں اقوام متحدہ کی ہنگامی امداد کی کنوینر اسٹیفن او برائن نے کہا ہے کہ اس ملک میں پھنسے ہوئے لوگوں کی تعدادگزشتہ چھ ماہ میں 486700 سے بڑھ کر 974080 ہو گئی ہے۔
انہوں نے کہا، ”لوگوں کوبمباری میں تنہا، بھوکا اورطبی و انسانی امداد سے محروم رکھا گیا ہے تاکہ یہ لوگ یا تو بھاگ جائیں یا پھر خودسپرگی کر دیں ۔ او برائن نے اس کے لیے وہاں کی بشار الاسد حکومت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہاکہ خاص طور پر صدر بشار الاسد کی قیادت والی فوجیں سوچی سمجھی اسکیم کے تحت اس قسم کے ہتھکنڈوںکا استعمال کر رہی ہیں۔
محاصرے کے دائرے میں آنے والے نئے علاقوں میں باغیوں کے قبضے والے دمشق کے مضافاتی علاقے جوبار، ہزار الاسود اور خان الشیک شامل ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Un says nearly a million civilians living under siege in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply