ترک صدر اردوغان کی سعودی عرب اور قطر کے درمیان مصالحت کرانے کی کوشش ناکام

دوحہ: ترکی کے صدر رجب طیب اردغان سعودی عرب ،بحرین ، متحدہ عرب امارات اور مصر پر مشتمل عرب بلاک اور قطر کے درمیان مصالحت کرانے کی سفارتی کوشش میں کامیاب نہیں ہو سکے اور ان کے اس دورے سے سعودی عرب اور قطر کے درمیان تعطل دور نہ ہو سکا۔ اور وہ بے نیل و مرام وطن واپس لوٹ گئے۔اردوغان خلیجی ممالک کے دورے کے آخری مرحلہ میں پیر کی شام میں قطر کے دارلخلافہ دوحہ پہنچے تھے۔ جہاں انہوں نے امیر قطر سے ملاقات کرکے سعودی عرب اور قطر کے درمیان جاری کشیدگی کے خاتمے کے لئے ممکنہ حل پر تبادلہ خیال کیا۔ اردوغان کویت سے دوحہ پہنچے تھے۔
واضح رہے کہ تقریبا دو ماہ قبل سعودی عرب سمیت چار عرب ممالک نے قطر پر یہ الزامات لگا کر کہ وہ ہمسایہ ممالک کے داخلی امور میں مداخلت کررہا ہے اور دہشت گرد تنظیموں کی مالی اعانت کر رہا ہے اس سے تمام تعلقات منقطع کرنے کے ساتھ ساتھ قطر سے ملحق تمام سرحدوں کو بھی بند کر دیا۔اس سے قبل ترک صدر نے سعودی عرب کے دارالسلطنت ریاض میں خادم حرمین شریفین و فرمانروائے مملکت شاہ سلمان اور ولیعہد شہزادہ محمد بن سلمان سے اور پھرکویت کے امیر سمیت دیگر اعلی حکام سے اہم ملاقاتیں کیں۔ ملاقات میں ترک صدر نے خلیجی ممالک کے درمیان جاری تنازعہ اور کشیدگی کے حل کے لئے تفصیلی بات چیت کے ساتھ ساتھ دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے دو طرفہ کوششوں پر بھی تبادلیہ خیال کیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Turkish diplomacy ends in persian gulf without results in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply