اسلام کسی بھی مسلم ملک سے قطع تعلق یا بائیکاٹ کی اجازت نہیں دیتا: ترک صدر اردوغان

انقرہ:ترک صدر رجب طیب اردوغان نے خلیجی ممالک کی جانب سے قطر کا مکمل بائیکاٹ کر دینے کے فیصلہ اور اس پر فوری عمل آوری بھی شروع کر دینے کو غیر اسلامی و غیر شرعی قرار دیا ہے۔ انہوںنے کہا کہ اسلام میں کسی بھی مسلم بھائی سے تین روز سے زیادہ قطع تعلق کیے رکھنے کی سخت ممانعت آئی ہے اور اسلام جیسا آفاقی دین کبھی بھی کسی مسلمان ملک کے بائیکاٹ کی اجازت نہیں دیتا۔ وہ صلہ رحمی کی تلقین کرتا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ترک صدر نے اپنی سیاسی جماعت اے کے پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خلیجی ممالک نے قطر کا بائیکاٹ کر کے انتہائی خطرناک غلطی کی ہے۔
کسی قوم یا ملک کو ہر طرح سے تنہا کر دینا نہ تو انسانی اقدار کے مطابق ہے اور نہ اسلامی اقدار سے مطابقت رکھتا ہے۔ترک صدر نے قطر کے بائیکاٹ کی یوں تمثیل بیان کرتے ہوئے کہا کہ جیسے سب نے ملکر فیصلہ کیا ہے کہ قطر کو سزائے موت دے دی جائے تاکہ اس سے جینے کا حق بھی چھین لیا جائے۔ انہوں نے دہشت گردی کے خلاف قطر کی کوششوں کو ذکر کرتے ہوئے کہا کہ قطر نے ترکی کے ساتھ ملک کر داعش جیسی دہشت گرد تنظیم کے خلاف بڑے ٹھوس اور موثر اقدامات کئے ہیں جو کہ لائق تحسین ہیں۔رجب طیب اردگان نے قطر کے سفارتی بائیکاٹ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ قطر کا اس طرح بائیکاٹ کرنا کسی کے بھی مفاد میں نہیں ہے۔ بلکہ اس سے امت مسلمہ مزید انتشار کا شکار ہو گیا۔

Title: turkeys erdogan decries qatars inhumane isolation | In Category: دنیا  ( world )
Tags: , ,

Leave a Reply