امریکی سفارت خانہ کی یروشلم منتقلی سے ہی فلسطینیوں کی خونریزی کے لیے اسرائیلی فوج کے حوصلے بلند ہوئے:ترکی

غزہ /یروشلم: امریکی سفارت خانہ کی یروشلم منتقلی کے خلاف پیر کے روز احتجاج کر ررہے فلسطینیوں پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ میںدرجنوں افراد کی ہلاکت پر فرانس ،برطانیہ سمیت کئی ممالک نے شدید مذمت کی اور ترکی نے اسے فلسطینیوں کی ”خونریزی“ سے تعبیر کیا اور کہا کہ امریکی سفات خانہ کی منتقلی سے ہی اسرائیل کے حوصلے بلند ہوئے ہیں۔

ترکی کی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ سفارت خانہ کی منتقلی سے فلسطینیوں کے حقوق کی پامالی کی گئی ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ ترکی اسرائیلی فوجوں کے ہاتھوں پر امن احجاجی فلسطینیوں کی خونریزی کی سخت مذمت کرتا ہے ۔ دوسری جانب امریکہ نے اسرائیل کو تحمل سے کام لینے کی تلقین کرنے والے ملکوں میں شامل ہونے سے انکار کر دیا۔

اس کے ساتھ ہی اس نے اس کا تمام تر ذمہ دار حماس تنظیم کو ٹہراتے ہوئے اسرائیلی وزیر اعظم کے اس بیان کو درست قرار دیا کہ اسرائیلی فوج نے یہ کارروائی سرحدوں پر اپنے دفاع میں کی ہے۔دریں اثنا اسرائیلی وزیر اعظم نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ سے اظہار تشکر کیا کہ انہوں نے ہمت سے کام لیتے ہوئے اپنے وعدے پورے کر دیے۔

واضح ہو کہ پیر کے روز ہونے والی اسرائیلی فوج کی کارروائی میں ہلاک ہونے والے فلاسطینیوں کی تعداد بڑھ کر58ہو گئی ۔جبکہ 2700سے زائد زخمی ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ2014کے بعد فلسطینیوں کی خونریزی کا یہ پہلا بدترین واقعہ تھا جس میں اتنی بڑی تعداد میں فلسطینی ہلاک و زخمی ہوئے ہیں۔یہ ہلاکتیں بندوق کی گولیوں، آنسو یس کے گولے اور کئی دیگر ذریعہ سے ہوئی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Turkey says us embassy move encouraged massacre by israeli security forces in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply