ترکی اور ایران کرد انتہاپسندوں کے خلاف مشترکہ کارروائی کریںگے

انقرہ: ترکی کے وزیر داخلہ سلیمان صویلو نے کہا ہے کہ کرد باغیوں کے خلاف ترکی اور ایران ایک مشترکہ کارروائی کریں گے۔

لیکن انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ یہ کارروائی کب اور کہاں کی جائے گی۔ ترکی کرد ورکرز پارٹی (پی کے کے) کے خلاف برسوں سے نبرد آزما ہے جبکہ ایرانی سلامتی دستے اس کی حلیف پارٹی آف فری لائف آف کردستان (پی جے اے کے) کے خلاف بر سر پیکار ہیں۔

ترکی اور اس کے کئی مغربی حلیفوں نے پی کے کے کو ایک دہشت گرد گروپ قرار دے رکھا ہے۔ دونوں گروپوں نے پڑوسی ملک عراق میں اڈے قائم کر رکھے ہیں۔صویلو کے حوالے سے سرکاری خبر رساں ایجنسی اناطولو نے کہا ہے کہ خدا نے چاہا تو ایران کے ساتھ مل کر پی کے کے کے خلاف ایک مشترکہ کارروائی کریں گے۔

صویلو نے یہ نہیں بتایا کہ پی کے کے کے کن اڈوں کو نشانہ بنا کر کارروائی کی جائے گی۔ترک صدر رجب طیب اردوغان نے ماضی میں کہا تھاکہ کرد انتہاپسندوں کے خلاف ترک ایرانی کارروائی ہمیشہ سے ایجنڈے پررہی ہے۔اور مجوزہ کارروئی میں عرام میں واقع انتہاپسندوں کے اڈوںکو نشانہ بنایا جائے گا۔

اردوغان نے کہا کہ 2017میں دونوں ممالک کے فوجی سربراہوں نے اس پر تبادلہ خیال کیا تھا کہ کرد انتہاپسندوں کے خلاف کیسے کام کیا جائے۔لیکن اس وقت ایران کے پاسداران اسلامی انقلاب نے اس کی تردید کی تھی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Turkey says it will stage raids with iran against kurdish rebels in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.