ترکی کے صدر اردوغان نے روسی طیارہ مار گرائے جانے پر روس سے معافی مانگ لی

استنبول: ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے 2015میں روسی جیٹ طیارے کو مار گرانے اور اس کے دو پائلٹوں کی ہلاکت پر صدر روس ولادمیر پوتین سے معافی مانگ لی۔
اردوغان نے پوتین کو ایک ذاتی مکتوب ارسال کیا جس میں انہوں نے دو طرفہ تعلقات کی بحالی کے لیے اپنی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے یہ بھی لکھا کہ طیارہ کو گرانے اور اس کے دو پائلٹوں کی ہلاکت کا انہیں بہت افسوس ہے اور وہ اظہار معذرت کرتے ہیں۔ مکتوب میں طیارے گرانے کے لئے افسوس کا اظہار کرنے کے ساتھ یہ بھی کہا گیا کہ اب دونوں ممالک کا الگ رہنا ایک دوسرے کے مفاد میں نہیں ہے۔
واضح رہے کہ روس نے27جون کو کہا تھا کہ پوتین کو اردوغان کا ایک مکتوب موصول ہوا ہے جس کی بعد میں ترکی نے بھی تصدیق کر دی اور کہا کہ روس اور ترکی تعلقات بہتر بنونے کے تمام ضروری تقاضے پورے کرنے پر متفق ہوگئے ہیںروس کے طیارے کو مار گرائے جانے کے بعد ماسکو کے ساتھ ترکی کے تعلقات کشیدہ ہوگئے تھے اور وہ بین الاقوامی پلیٹ فارم پر الگ تھلگ محسوس کر رہا تھا۔
روس نے اس واقعہ کے بعد اس سے بات چیت کرنے سے بھی انکار کر دیا تھا۔ اسی دوران ترکی نے یہ اعلان کیا کہ اس کے وزیر خارجہ مولود چاو¿ش اوغلویکم جولائی کو ایک علاقائی سربراہ کانفرنس میں شرکت کے لیے روس کے شہر سوچی جائیں گے جہاں وہ اپنے روسی ہم منصب سے ملاقات کریں گے۔

Title: turkey russia take step to mend ties fm to go to russia | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply