امریکہ نے شام پر بمباری شروع کر دی،اسد کو زہریلی گیس حملہ کی قیمت چکانا ہوگی: ڈونالڈ ٹرمپ

واشنگٹن:امریکی بمبار طیاروں نے شام کے اس فضائی اڈے پر جسے ادلب میں زہریلی گیس حملہ کے لیے استعمال کیا گیا تھا زبردست بمباری کی۔شامی صدر بشار الاسد کے خلاف امریکہ کا یہ پہلا براہ راست حملہ ہے۔ یہ فضائی اڈہ 8مربع کلو میٹر سے زائد رقبہ پر محیط ہے۔بمباری اس قدر زبردست تھی کہ لاشوں کے کشتوں کے پشتے لگ گئے اور ہر سو سوائے بکھرے انسانی اعضا اور بہتے خون کے کچھ نظر نہیں آرہا ۔
امریکی انٹیلی جنس اہلکاروں کے مطابق جس وقت الشریاط فضائی اڈے پر ایک شامی جیٹ میں سرین( زہریلی گیس بھری) بھری جارہی تھی تو روسی فوجی عملہ بھی وہاں موجود تھا۔شامی باغیوں کے رہنماؤں نے بھی دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے اس پائلٹ کو پہچان لیا ہے جس نے 4اپریل کو صبح ساڑھے چھ بجے خان شیخون پر بمباری کی تھی۔اس کے پانچ گھنٹے بعد اس اسپتال پر ایک روایتی بم مارا گیا جہاں صبح کے حملہ کے متاثرین کا علاج کیا جا رہا تھا۔ذرائع نے بتایا کہ دونوں حملوں میں گراؤنڈ راڈار سے ایک روسی ساخت کے سخوئی جنگی طیارے کو دیکھاگیا۔
اس کے بعد گراؤنڈ پر ایسے اشارے بھی موصول ہوئے جس کے توسط سے اس بات سے مطلع کیا گیا کہ کیمیاوی مادہ گرایاجا چکا ہے۔اس سے قبلامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا کہ انہوں نے اس شامی فضائی اڈے میزائل حملوں کا حکم جاری کر دیا ہے جہاں سے کیمیاوی حملہ کیا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے یہ اقدام امریکہ کے اہم سلامتی مفاد میں شہریوں پر کیمیائی گیس کے استعمال کے بعد بشار الاسد حکومت کے خلاف فوجی کارروائی کا عندیہ دے دیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر نے الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ بشار الاسد نے شہریوں کے خلاف کیمیکل ہتھیار استعمال کر کے بہت بڑے جرم کا ارتکاب کیا ہے جس کیشامی حکومت کو قیمت چکانا ہوگی۔جب صحافیوں نے سوال کیا کہ امریکہ اس کے بدلے میں کیا کر سکتا ہے تو امریکی صدر کا کہنا تھا کہ شامی حکومت کے خلاف کچھ نہ کچھ کرنا پڑے گا۔دوسری جانب امریکی سیکریٹری خارجہ کا کہنا تھا کہ عام شہریوں پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے بعد امریکی صدر شام کے خلاف فوجی کارروائی پر غور کر رہے ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ امریکہ پہلے بھی بشار الاسد کو ہٹانے کے لیے بین الاقوامی اتحاد پر زور دے رہا ہے۔دوسری جانب آج صبح امریکہ نے شام کے ائیر بیس پر کئی ایک کروز میزائل سے حملہ کیا ہے۔ امریکی محکمہ دفاع کا کہنا ہے کہ مشرقی بحیرہ روم موجود بحری بیڑے سے پچاس ہاک کروز میزائل سے شام کے ایک ہوائی اڈے کو نشانہ بنایا گیا ہے۔صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ اس ائیر بیس پر حملے کا حکم انہوں نے ہی دیا ہے کیونکہ اس ائیر بیس سے عام شہریوں پر کیمیکل ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا تھا۔شام کے سرکاری ٹیلی ویژن نے اس حملے کی تصدیق کی ہے اور اسے امریکی جارحیت قرار دیا ہے۔ شامی حکومت کی جانب سے ابھی تک کسی جوابی کارروائی کی اطلاع نہیں ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Trump orders strikes on assad airbase in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags: , , ,

Leave a Reply