بنگلہ دیش میں سیاسی انتشار کی سازش رچنے کے الزام میں جماعت اسلامی کے متعدد رہنما گرفتار

ڈھاکہ:بنگلہ دیش کی پولیس نے دہشت گردانہ سرگرمیوں کو فروغ دینے اور ملک میں سیاسی انتشار و افرا تفری مچانے کا منصوبہ بنانے کے الزام میں بنگلہ دیش کی سب سے بڑی جماعت (جماعت اسلامی)کے متعدد رہنماؤں کو گرفتار کر لیا۔
ڈھاکہ میٹرو پالیٹن پولس کے محکمہ سراغرسانی کے ڈپٹی کمشنر شیخ نجم الاسلام نے بتایا کہ گرفتار شدگان میں جماعت اسلامی کے امیرمقبول احمد اور جنرل سیکریٹری شفیق الرحمن کے علاوہ سابق وزیر میاں غلام پروار، چاٹگام جماعت اسلامی کے امیر شاہجہاں،سکریٹری جنرل نذر الاسلام،اور چاٹگام جنوب کی شاخ کے امیر ظفر صدیق 8گرفتار شدگان میں شامل ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ انہیں اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ سب لوگ ایک مکان میں جمع ہو کر دہشت گردانہ کارروائیاں کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔
انہون نے کہا کہ مکان مالک نوشیر علی کو بھی گرفتار کر لیا گیا۔ جماعت اسلامی نے ایک بیان جاری کرکے ان الزامات کی تردید کی ہے اور اس کے خلاف مظاہرہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ریلیز میں کہا گیا ہے کہ جس میٹنگ کی بات کی جا رہی ہے وہ ایک غیررسمی ملاقات تھی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اقتدار پر قابض رہنے کے لئے ہمارے بے گناہ حامیوں کوحراست میں لے کر ہراساں کر رہی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Top leaders of jamaat e islami arrested in bangladesh reports in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply