چینی حکمرانی کے خلاف احتجاج میں اقدام خود سوزی کرنے والا تبتی طالبعلم دم توڑگیا

نئی دہلی: چینی حکمرانی کے خلاف احتجاج میں چار روز پہلے خود سوزی کی کوشش کرنے والا ہندوستان میں زیر تعلیم ایک 16سالہ تبتی اسکولی طالبعلم جو دہرہ دون کے ایک اسپتال میں زیر علاج تھا زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گیا۔
اسپتال کی ترجمان پونم ڈھنڈا نے کہا کہ دورجے سورنگ نام کا یہ طالبعلم جس نے ، جمعرات کو اسی اسپتال میں جہاں اسے پیر کے روز تبتی پناہ گزینوں کی ایک بستی میں خود کو آگ لگا لی تھی،چار روز تک موت و زیست کی کشمکش میں رہنے کے بعد جمعرات کی شب تقریباً9بجے دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گیا۔
فری تبت اخبار میں شائع خبر کے مطابق 16سالہ دورجے سورنگ نے بستر علالت پر دوران علاج یہ کہا تھا کہ اس نے بچپن سے ہی تبت کے لیے کچھ کر گذرنے کا تہیہ کر رکھا تھا۔لندن میں سرگرم تبتیوں کی وکالت کرنے والے ایک گروپ نے کہا کہ یہ کمسن بچہ چین کے باہر اس قسم کا جان آفریں احتجاج کرنے و الا 8واں تبتی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Tibetan schoolboy 16 who set himself on fire dies in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply