مسلم ممالک کے شہریوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی کے خلاف امریکیوں کا زبردست مظاہرہ

واشنگٹن: امریکہ میں ہزاروں لوگوں نے نومنتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے مسلم اکثریتی آبادی والے سات ممالک کے شہریوں کے امریکہ آنے پر عارضی طور پر پابندی لگانے سے متعلق حکم جاری کرنے کی مخالفت میں آج شہروں، ہوائی اڈے اور دیگر مقامات پر ریلی نکال کر مظاہرہ کیا۔
نیویارک، واشنگٹن اور بوسٹن میں ہفتہ کو امریکی کسٹمز اور بارڈر سیکورٹی ایجنٹوں کی جانب سے ہوائی اڈے پر ٹرمپ کے حکم کی تعمیل کروانے کی کوشش کے خلاف مظاہرین نے ہوائی اڈے پہنچ کر زبردست مظاہرہ کیا تھا۔ حکم کے مطابق شام کے پناہ گزین اور عراق، ایران، سوڈان،لیبیا،صومالیہ اوریمن کے شہریوں پر عارضی طور پر امریکہ آنے پر پرپابندی لگائی گئی ہے جس کی وجہ سے امریکی ہوائی اڈے پر آنے والے کئی افراد کو حراست میں لے لیا گیا ۔
ڈیموکریٹک سنیٹر چارلس اسکومر نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ کا حکم امریکہ کے خلاف ہے اور یہ ملک کے بنیادی اقدار کے خلاف ہے۔ہم لوگ یہاں کئی افرادکی زندگی اور موت سے متعلقہ چیزوں کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔ میں اس وقت تک یہاں سے نہیں ہٹوں گا جب تک یہ غیرمنصفانہ احکام واپس نہیں لے لیے جاتے۔
واشنگٹن میں وائٹ ہاؤس کے نزدیک لافیٹ اسکوائر میں نکالی گئی ریلی کے دوران لوگ ”کوئی نفرت نہیں، کوئی خوف نہیں، پناہ گزینوں خوش آمدید“کا نعرہ لگا رہے تھے۔
اس فیصلے کے خلاف زبردست احتجاج کے درمیان مسٹر ٹرمپ نے کل اپنے دفاع میں جاری ایک بیان میں کہا کہ آئندہ 90 دنوں کے اندر اس معاملے کے سلسلے میں محفوظ پالیسی اپنانے کے بعد امریکہ تمام ممالک کیلئے ویزا کی سہولت جاری کرے گا۔

Title: tens of thousands in u s cities protest trump immigration order | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply