طالبان کے لیے اب مذاکرات کی میز پر آنے کے سوا کوئی چارہ نہیں: اشرف غنی

کابل: صدر افغانستان اشرف غنی نے طالبان کو انتباہ دیاہے کہ اگر وہ راہ راست پر نہ آئے اور حکومت وقت کے ساتھ مذاکرات شروع نہ کیے تو اقوام متحدہ کی جانب سے ان پر بین الاقوامی دہشت گرد تنظیم ہونے کا لیبل لگ جائے گا۔ کابل میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اشر ف غنی کہا کہ ویسے بھی طالبان کے پاس اب اس کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہے کہ وہ افغان حکومت کے ساتھ مذاکرات کے لئے میز پر آئیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر طالبان افغان حکومت کے ساتھ مذاکرات کے لئے آمادہ نہیں ہوئے تو انہیں اقوام متحدہ کی جانب سے عالمی سطح پر دہشت گرد تنظیموں میں شامل کر دیا جائے گا۔
افغان صدر کا مزید کہنا ہے کہ طالبان نے ملک میں امن و امان کی بحالی کے لئے اب تک مذاکرات کے لئے آمادگی ظاہر نہیں کی ہے جس کی وجہ سے افغانستان کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ طالبان کو افغان قوم اور حکومت کے ساتھ صلح کر لینی چاہئے تا کہ سب مل کر ملکی ترقی اور عوامی مسائل کے حل کے لئے کردار ادا کریں۔واضح رہے کہ گزشتہ کئی سالوں سے دہشت گرد تنظیم طالبان نے افغانستان کے ایک بڑے حصے کو اپنے قبضے میں لے رکھا ہے جبکہ آئے روز ان کی جانب سے دہشت گردانہ کارروائیاں بھی کی جا رہی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Taliban will have to talk with the govt says ashraf ghani in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply