طالبان نے افغان فوج کو پسپا کر کے پکتیا صوبہ کے جانی خیل شہر پر پھر قبضہ کر لیا

کابل: افغانستان کے پکتیا صوبہ کے شہر جانی خیل پر قبضہ حاصل کرنے کے لیے طالبان نے زبردست حملہ کر کے افغان فوج کو پسپا کر کے رات دیر گئے شہر پر اپنا تسلط قائم کر لیا۔ گھمسان کا رن پرنے کے بعدطالبان نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے جانی خیل شہر پر تیسری مرتبہ مکمل کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔جانی خیل کےایک بار پھر افغان فوجون کے ہاتھوںسے نکل جانا اس امر کی غمازی کرتا ہے کہ افغان فورسز کو دور افتادہ علاقوں پر اپنا کنٹرول برقرار رکھنے میں کس قدر مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔لیکن ابھی حکومت نے اس کی تصدیق نہیں کی ہے بلکہ حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ جانی خیل اور اس کے اطراف میں گھمسان کی لڑائی ابھی جاری ہے۔ دوسری جانب طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ کا کہنا ہے کہ جانی خیل شہر کی تمام اہم عمارتوں پر طالبان نے قبضہ کر لیا ہے اور اس شہر سے پولیس کو بے دخل کر دیا ہے۔
پچھلے کچھ دنوں سے افغانستان میں طالبان مسلسل کئی کامیابیاں حاصل کر چکے ہیں، جن میں صوبہ غور اور صوبہ سرپل کے اہم علاقے ہیں۔واضح رہے کہ افغانستان کے مشرقی صوبے پکتیا کے شہر پر کنٹرول کرنے کے لیے ایک طویل عرصہ سے افغان فوج اور طالبان کے درمیان آنکھ مچولی جاری ہے۔ پہلے چند مرتبہ افغان فورسز نے طالبان کو یہاں سے بے دخل کر کے اس شہر پر قبضہ کیا تھا۔ لیکن چند ہی دنوں بعد طالبان نے پھر سے کنٹرول حاصل کر لیا۔ اب بھی دو ہفتے قبل افغان فورسز نے جانی خیل شہر کا کنٹرول حاصل کیا لیکن پھر وہ فورسز یہاں سے چلی گئیں۔ جانی خیل کے ڈپٹی پولیس کمانڈر کا کہنا ہے کہ انہوںنے کئی مرتبہ اعلیٰ حکومتی حکام کو مطلع کیا تھا کہ یہاں ہمیں پولیس کی بھاری نفری چاہیے لیکن اس درخواست پر عمل نہیں ہوا اور اب طالبان نے موقع غنیمت جان کر حملہ کر دیا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Taliban retakes eastern afghan district from afghan forces in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply