طالبان نے ناجائز تعلقات رکھنے کے جرم میں عورت اور آشنا کو سزائے موت دے دی

کابل: افغانستان میں اگرچہ ایک جمہوری حکومت ہونے کا دعویٰ کیا جا رہا ہے لیکن گذشتہ کئی برسوں سے کیے جانے والے دعوے کی جو حقیقت ہے اور ملک کے مختلف حصوں میں طالبانی دہشت گرد کیسے دندناتے اوراپنی عدالتیں لگا کر موت کی سزا سنا نے کے ساتھ ساتھ شہری و فوجی لوگوں کو موت کے گھاٹ اتار رہے ہیں وہ کسی سے ڈھکاچھپا نہیں ہے۔

ایک افغان اہلکارکے مطابق ایسا ہی ایک واقعہ کو مغربی غور صوبہ میں پیش آیا جہاں طالبان نے یہ معلوم ہونے کے بعد ایک عورت اور مرد کو ناجائز تعلقات رکھنے کی پاداش میں موت کی سزا دے دی گئی کہ وہ اپنے شوہر کو چھوڑ کر ایک دوسرے مرد کے ساتھ بھاگ رہی ہے۔

صوبائی ترجمان عبد الحئی خطیبی نے کہا کہ اس جوڑے نے ایک موٹر سائیکل پر بیٹھ کر فرار ہونے کی کوشش کی لیکن ضلع میں ایک چوکی پر جس پر انتہاپسند تعینات تھے، طالبان نے روک کر گرفتار کر لیا۔خطیبی نے بتایا کہ یہ واقعہ بدھ کے روز رونما ہوا ۔

طالبان نے انہیں گرفتار کیا اور اپنی عدالت لگائی اور تیزی کے ساتھ مقدمہ چلاتے ہوئے دونوں کو سزائے موت سنادی۔ طالبان ،جو کم و بیش نصف افغانستان پر قابض ہیں ،اپنے زیر تسلط علاقوں میں سخت شرعی قوانین (کفارہ،حد ،تعزیر) نافذ کرنا چاہتے ہیں ۔اسی لیے طالبان زنا کی پاداش میں رجم (تا دم آخر)کی شکل میں سزائے موت دیتے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Taliban kill woman lover over adultery afghan official in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.