افغانستان میں داعش اور طالبان میں خونریز تصادم جاری،150سے زائد ہلاک و زخمی

کابل:افغانستان میں دہشت گرد تنظیموں داعش اور طالبان کے درمیان گذشتہ دو روز سے جاری تصادم کے دوران 150سے زائد دہشت گرد ہلاک و زخمی ہو چکے ہیں۔ افغان حکام کا کہنا ہے کہ ان دونوں تنظیموں کے دہشت گردوں کے درمیان جھڑپیں ابھی تک جاری ہیں۔افغان ذرائع کے مطابق افغانستان کے شمالی صوبے جاوز جان میں دہشت گرد تنظیموں کے درمیان خونی جھڑپیں ہوئی ہیں۔ دہشت گرد تنظیموں داعش اور طالبان کے درمیان ہونے والی خونی جھڑپوں میں 91 دہشت گرد ہلاک اور 68 زخمی ہو گئے ہیں۔ افغان حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والے بیشتر دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تحریک طالبان سے ہے۔صوبائی گورنر کے ترجمان محمد رضا غفوری کا کہنا ہے کہ دہشت گرد گروہوں کے درمیان جھڑپیں دو دن قبل ضلع دارزاب میں شروع ہوئی تھیں جو مخلتف علاقوں میں اب تک جاری ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ داعش اور طالبان کے درمیان جاری جھڑپوں نے انتہائی خطرناک صورت حال اختیار کی ہے۔داعش اور طالبان جھڑپوں کے دوران طالبان کے 76 اور داعش کے 15جنگجو مارے جاچکے ہیں جبکہ 56 طالبان اور 12 داعش جنگجو زخمی ہوئے ہیں جبکہ افغان فورسز نے زمینی اور فضائی کارروائیوں میں داعش کے 28جنگجو ہلاک کرنے کا دعویٰ بھی کیا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Taliban daesh clashes leave more than 150 dead or wounded in afghanistan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply