ننگر ہار خود کش حملہ میں کئی طالبان ،شہریوں اورفوجیوں سمیت 26ہلاک کئی درجن زخمی

کابل: ایک سرکاری اہلکار کے مطابق افغانستان کے مشرقی صوبہ ننگر ہار میں ایک خود کش دھماکہ میں کم از کم 26افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

صوبائی گورنر کے ترجمان عطا ءاللہ خوگیانی کے مطابق غازی امین اللہ شہر کے روڈ ضلع میں شام ساڑھے پانچ بجے عید جنگ بندی تقریب منانے کے لیے طالبان اور افغان مسلح افواج کے اہلکار ایک مقام پر جمع تھے کہ ان کے درمیان ایک خود کش بمبار نے خود کو دھماکہ سے اڑا لیا۔

بتایا جاتا ہے کہ درجنوں غیر مسلح طالبان عید منانے کابل اور دیگر شہروں میں داخل ہوئے۔ افغان سلامتی دستوں اور شہری جنگ بندی پر اس قدر خوش تھے کہ اپنے جذبات پر قابو نہیںپا رہے تھے اور وہ بے اختیار باہم گلے ملنے اور پیمانے پر ایک دوسرے کے ساتھ سیلفی لینے لگے۔

اسی دوران ایک دوسرے سے عید کی خوشیاں بانٹنے والوں میں ایک خود کش بمبار بھی پہنچ گیا اور کود کو دھماکہ سے اڑالیا۔ دولت اسلامیہ فی العاق و الشام (داعش) نے اس حملہ کی ذمہ داری لی ہے ۔ اس کیخبر رساں ایجنسی عمق کے مطابق یہ حملہ جنگ بندی کی خوشی منانے کے لیے طالبان او افغان فورسز کے اجتماع کو نشانہ بنا کر کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ طالبان نے عید کے پہلے تین روز کے لے سیز فائر کا اعلان کیا تھا۔اور 2001میں امریکی حملوں کے بعد پہلی بار اعلان کیا تھا کہ وہ تین روز تک افغان سلامتی دستوں کو چھیڑیں گے تک نہیں۔ لیکن امریکی قیادت والے ناٹو دستوں پر حملے جاری رہیں گے۔ جنگ بندی جمعہ سے نافذ العمل تھی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Taliban civilians security personnel suffer heavy casualties in nangarhar blast in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply