شامی فوج آئندہ 48گھنٹے کے اندر دیر الزور پر قبضہ کر لے گی:گورنر

دمشق: شام کی فوج دہشت گرد تنظیم داعش کے خلاف کارروائیوں میں پیشقدمی جاری رکھتے ہوئے شام میں دہشت گردوں کے زیر قبضہ سب سے بڑے علاقے دیرالزور کے دروازے تک پہنچ گئیہے۔ صوبہ کے گورنرمحمد ابراہیم سامرا نے کہا کہ ان کے جانباز سپاہی زیادہ سے زیادہ 48گھنٹے میں دیر الزور میں داخل ہو جائیں گے ۔ اپنی تازہ ترین کارروائیوں میں دہشت گردوں کو شکست دیتے ہوئے شامی فوج صوبہ رقہ کے جنوب مشرق اور صوبہ حمص کے شمال مشرق سے صوبہ دیرالزور کی سرحدوں میں داخل ہو چکی ہے۔شامی فوج کی دہشت گردوں کے خلاف کارروائیوں کے دوران انہیں روسی فضائیہ کی مدد بھی حاصل تھی جس کی وجہ سے شامی فوج نے نہایت ہی اہم اور اسٹرٹیجک علاقوں پر کنٹرول حاصل کرتے ہوئے دیرالزور کی جانب پیشقدمی کی ہے۔ ان کارروائیوں میں داعش کے درجنوں اہم اڈوں اور اسلحے کے گوداموں کو نشانہ بنایا گیا اور ان کے توپخانوں سمیت ہیڈکوارٹر کو بھی تباہ کر دیا گیا ہے۔ ان کارروائیوں میں سینکڑوں دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔دوسری جانب شامی فورسز نے حلب میں بھی دہشت گرد گروہ جبة النصرہ کے خلاف بھرپور کارروائی کرتے ہوئے ان کے متعدد ٹھکانوں کو تباہ کر دیا ہے جس میں درجنوں دہشت گرد عناصر ہلاک بھی ہوئے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Syrian army flattens isis positions will enter deir ez zor within 48 hours governor in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply