حلب پر بمباری اور امریکہ وروس کی ایک دوسرے پر الزام تراشی جاری

عمان: شامی حکومت کی فورسیز کے جنگی طیاروں نے حلب پر بم برسائے تو امریکہ نے روس پر شام میں بربریت کرنے کا الزام لگایا۔ باغیوں کے زیر تسلط علاقہ پر زبردست بمباری کے باعث تقریباً1.75ملین افراد پانی کی بوند بوند کو ترس رہے ہیں۔جمعہ کی بمباری کے باعث بال النیراب پمپنگ اسٹیشن کی مرمت نہیں ہو سکی۔ روس کا کہنا ہے کہ شام کی جنگ روکنا ناممکن ہوچکا ہے۔
پچھلے ہفتہ جنگ بندی ٹوٹنے کے بعد سے حالات اور بگڑ چکے ہیں۔ لڑائی نے شدت اختیار کرلی ہے اور امریکہ اور روسی سفارتکار اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی میٹنگ میں کسی اتفاق رائے پر پہنچنے کے بجائے ایک دوسرے سے ٹکرارہے ہیں۔ اس لئے لڑائی کا سفارتی حل نکلنے کا امکان معدوم ہوتا جارہا ہے۔ جو باغی جو حلب پر قبضہ کے لئے صدر بشار الاسد کی فورسیز سے لڑرہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ جب تک بمباری فوراً نہ روکی جائے قیام امن کا کوئی بھی عمل ناکام رہے گا۔
شام کے سب سے بڑے شہر میں جہاں ڈھائی لاکھ عام شہری پھنسے ہوئے ہیں ، اس پر باغیوں کے قبضہ والے نصف حصہ پر قبضہ کرنا خانہ جنگی میں اسد فورسیز کی سب سے بڑی فتح ہوگی۔ انہوں نے روسی اور ایرانی مرد کی بدولت کئی سال کے بعد اتنی مضبوط پوزیشن حاصل کی ہے۔ انہوں نے جمعرات کے روز میدان جنگ میں فیصلہ کن فتح حاصل کرنے کے لئے تازہ حملہ کیا تھا

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Syria bombings leave 1 75 million without running water in aleppo in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply