کابل میں ایک امام بارگاہ کے قریب خود کش دھماکہ میں 26ہلاک

کابل: افغانستان کے دارالخلافہ کابل میں ایک امام بارگاہ کے قریب سڑک پر ہوئے خود کش دھماکہ میں کم از کم26افراد ہلاک اور 18دیگر زخمی ہو گئے۔یہ دھماکہ اس وقت ہوا جب افغان شیعہ نوروز کی تعطیل پر نئے سال کا جشن منا رہے تھے۔
وزارت داخلہ کے نائب ترجمان نصرت رحیمی نے کہا کہ علی آباد علاقہ میں واقع کرت سخی درگاہ کے قریب ایک خود کش بمبار نے خود کو دھماکہ سے اڑالیا۔ جائے وقعہ بڑا دلخراش منظر پیش کر رہا تھا۔دھماکہ ہوتے ہی اس کی زد میں آنے والے افراد کے جسموں کے چیتھڑے ہو گئے اور انسانی جسم کے ٹکڑے اور خون کے لوتھڑے فضا میں بلند ہو کر دور دور جا کر گرے۔
جائے واردات اور اس کے اطراف دور دور تک انسانی جسموں کے اعضاءبکھرے پڑے دیکھے گئے۔ اس سے پہلے بھی یہ مقام دہشت گردانہ حملوں کا نشانہ بنتا رہا ہے۔
بدھ کی دوپہر میں کیا گیا یہ دہشت گردانہ حملہ کابل میں شیعہ فرقہ کے مقدس مقامات کو نشانہ بنانے کے سلسلہ کی تازہ کڑی ہے۔ دھماکہ اس وقت ہوا جب لوگ شہر کی سب سے بڑی یونیورسٹی کے قریب واقع امام بارگاہ سے باہر نکل رہے تھے۔
دریں اثنا طالبان نے اس دھماکہ میں اپنا ہاتھ ہونے کی تردیدکر دی۔ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ایک بیان میںکہا کہ طالبان کے کسی انتہا پسند کا بدھ کے روا امام بارگاہ کے قریب کیے گئے خود کش دھماکے سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

Title: suicide bomber kills at least 26 near shrine in kabul 18 injured | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply