ایتھوپیا میں مذہبی تقریب کے دوران بھگدڑ،150افرادکی موت : اپوزیشن

عدیس ابابا:(یو این آئی) ایتھوپیا کے اورومیو علاقے میں ایک مذہبی تقریب کے دوران بھگدڑ مچ جانے سے کم از کم 52 افراد کی ہلاکت کی خبر ہے تاہم اپوزیشن جماعتوں نے دعوی کیا کہ 150افراد سے زیادہ ہلاک ہوئے ہیں۔
ایتھوپیائی دارالحکومت عدیس ابابا سے 42کلومیٹر دور بیشوفتو میں مذہبی تقریب میں ہزاروں افراد یکجا ہوئے تھے۔ وزیر اعظم ہالہ مریم ڈیسالن نے اورومیو علاقہ میں ہوئے بھگدڑ کے اس واقعہ کے لئے مظاہرین کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق اس بھگدڑ میں 52 افراد ہلاک ہوگئے۔ اس بھیڑ میں شامل کچھ لوگ سرکار مخالف نعرے لگارہے تھے اور مذہبی جلوس سرکار مخالف جلوس میں تبدیل ہوگیا۔
مظاہرین کو قابو میں کرنے کے لئے پولیس کو آنسوگیس ‘ربر کی گولیا اور لاٹھی چارج کا سہارا لینا پڑا جس کی وجہ سے بھگدڑ مچ گئی۔ سرکاری ذرائع نے ان رپورٹوں کی بھی تردید کی ہے جن میں کہا گیا ہے کہ ایک مذہبی تقریب کے دوران جمع ہوئے لاکھوں لوگوں پر سیکورٹی فورسیز نے فائرنگ کی۔ دوسر ی طرف اپوزیشن کا کہنا ہے کہ اس حادثے میں کم از کم 150افراد ہلاک ہوئے ہیں۔
خیال رہے کہ گذشتہ چند ماہ سے ارومیا اورامہارا صوبہ کے لوگ مسلسل یہ شکایت کرتے رہے ہیں کہ انہیں سیاسی اور اقتصادی سطح پر الگ تھلگ رکھا گیا ہے جس کی وجہ سے گذشہ چند ماہ میں حکومت او رمظاہرین کے درمیان کئی مرتبہ جھڑپیں بھی ہوئی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Stampede in ethiopia in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply