صدر سری لنکا نے ملک میں مسلم مخالف فسادات کی تحقیقات کا حکم جاری کر دیا

کولمبو:سری لنکائی شہر کینڈی میں گذشتہ ہفتے کے دوران ہونے والے فسادات کی، جس کے باعث ملک گیر پیمانے پر ایمرجنسی نافذ کرنا پڑی تھی باقاعدہ تحقیقات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
صدر میتری پالا سرسیسنا کے دفتر سے جاری بیان میں تحقیقات شروع کرنے کے اعلان کے ساتھ کہا گیا ہے کہ تین سبکدوش ججوں کا ایک پینل امن و قانون درہم برہم ہونے کے اسباب جاننے کے لیے ہمہ پہلو تحقیقات کرے گا ۔
واضح رہے کہ کینڈی میں چار روز تک جاری رہنے والے فسادات میں تین افراد ہلاک اور بیس زخمی ہوئے تھے۔ پیر سے جمعرات تک جاری رہنے والی پرتشدد کارروائیوں میں مقامی مسلمانوں کے قریب دو سو مکانات اور کاروباری مراکز کو نذر آتش کرنے کے ساتھ ساتھ گیارہ مساجد کو بھی نقصان پہنچایا گیا۔
کینڈی میں نافذ کرفیو اٹھا لیا گیاجبکہ ان فسادات میں ملوث ہونے کے شبہ میں ڈیڑھ سو مشتبہ افراد کو حراست میں کر ان سے پوچھ گچھ۔ شروع کر دی گئی۔دریں اثنا سنگا پور سے شائع ہونے والے ایک کثیر الاشاعت روزنامہ دی نیو پیپر کے مطابق سنگا پور میں رہائش پذیر سری لنکا کے تارکین وطن نے خیال ظاہر کیا ہے کہ ان فسادات کے پس پشت سیاسی محرک کارفرما ہو سکتا ہے۔
کیونکہ جس واقعہ کو بنیاد بنا کر مذہبی اور نسلی رنگ دیا گیا وہ راہ چلتے ہوجانے والا ایک واقعہ تھا۔یہ ساری صورت حال خود حکومت کی پیدا کردہ ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sri lanka lifts curfew panel to probe anti muslim riots in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply