بصرہ میں مظاہرین پر سلامتی دستوں کی فائرنگ 6ہلاک40سے زائد زخمی

بغداد: عراق کے شہر بصرہ میں پولس فائرنگ میں اس وقت 6مظاہرین ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے جب اسلحہ سے لیس مظاہرین نے ایک سرکاری عمارت میں گھسنے کی کوشش کی۔

سلامتی دستوں نے انہیں عمارت میں داخل ہونے سے باز رکھنے کے لیے آنسو گیس کے گولے چھوڑنے کے ساتھ ساتھ فائرنگ بھی شروع کر دی۔حکام نے تشدد کو مزید پھیلنے سے روکنے کے لیے منگل کی شب کرفیو نافذ کر دیا۔عراق کا سب سے بڑا تیل مرکز بصرہ میں موسم گرما کے اوائل سے ہی وسیع پیمانے پر احتجاجی مظاہرے کیے جا رہے ہیں۔

یہ مظاہرے بجلی کی شدید قلت کے خلاف احتجاج میں شروع ہوئے تھے جس نے تیزی کے ساتھ بد عنوانی،غریبی اور روزگار کی کا معاملہ بھی اٹھانا شروع کر دیا۔ پیر کے روز مظاہرے کے دوران فائرنگ میں ایک شخص کے مرجانے اور ایک دیگر کے زخمی ہوجانے کے بعدسلامتی کی صورت حال نہایت درجہ ابتر ہو گئی تھی۔

اور بصرہ کے قبائلیوں کے سربراہوں نے دھمکی دی تھی کہ اگر بصرہ سیکورٹی آپریشنز کے کمانڈر کو برطرف اور اس کی فوجوںکو واپس نہیں بلایا گیا توسخت جوابی کارروائی کی جائے گی جس میں صوبہ میں واقع تمام حکومتی تنصیبات اور تیل کمپنیوں کو نشانہ بنایا جائے گا۔

شیعوں کاسب سے مضبوط عسکری دستہ عصائب اہل الحق نے بھی سلامتی دستوں کے ساتھ جنگ کرنے کی دھمکی دی تھی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Six killed as armed protesters storm basra government in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply