سنگاپور کے وزیر اعظم کی علالت کے باعث سیاسی صورت حال غیر یقینی کیفیت سے دوچار

سنگاپور:سنگاپور کے وزیر اعظم لی ہیسن لونگ کی صحت خراب ہونے کی وجہ سے کاروبار اور سرمایہ کاری کے لئے جنت مانے جانے والے سنگاپور کی سیاسی قیادت پر غیر یقینی صورتحال کے بادل چھا ئے ہوئے ہیں۔ اتوار کو سنگاپور کے قومی دن کے موقع پر اپنی تقریر کے دوران وزیر اعظم لی ہیسن لونگ نقاہت کے باعث لڑکھڑا کر اسٹیج سے گرنے ہی والے تھے۔
جس کے بعد مہینوں سے سنگاپور میں قیادت بحران سامنے آ گیا ہے۔ ڈاکٹروں نے انہیں29اگست تک رخصت علالت پر جانے اور مکمل آرام کرنے کہا ہے۔ وزیر اعظم لی کے والد اور سنگاپور کے بانی لی کوان یے کی گزشتہ سال موت کے بعد سنگاپور میں ایک دور کا خاتمہ ہو گیا۔ اس وقت سنگاپور کے دنیا میں سب سے زیادہ معروف مالیاتی دارالحکومت کے طور پر ابھر کر سامنے آئے کے موضوع پر بھی سوال کھڑے کئے جا رہے ہیں۔
سنگاپور میں اسلامی دہشت گردوں کی طرف سے حملے کا خطرہ بھی قائم ہے۔ پولیس نے اس معاملے میں سنگاپور کے دو شہریوں کو گرفتار بھی کیا تھا۔ یہ دونوں شہری شام میں دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) میں شامل ہونے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔ جبکہ ایک دوسرے معاملے میں انڈونیشیائی پولیس نے سنگاپور پر راکٹ حملے کو ناکام کر دیا۔ پیپلز ایکشن پارٹی (پ اے پی) کے سابق ممبر پارلیمنٹ اندرجیت سنگھ نے کہا کہ سنگاپور واقعی میں اس وقت خراب معیشت اور دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے خطرے سے دوچار ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Singapore pms health scare exposes countrys leadership uncertainty in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply