ہندوستان میں نوزائیدہ اور پاکستان میں سات سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی دہل دہلانے والی واردات: اقوام متحدہ

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ نے پاکستان میں ایک نو زائیدہ اور پاکستان مین ایک سات سالہ بچی کے ساتھ ریپ کے واقعہ پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے سربراہ انٹونیو گوٹیریس کے ترجمان اسٹیفن ہوجاریک کا کہنا ہے کہ اگرچہ ہندوستان میں ایک8ماہ کی بچی کے ساتھ ریپ کرنے کی انسانیت سوز واردات اور پاکستان میں سات سالہ بچی سے جنسی زیادتی کے بعد قتل دل دہلا دینے والی وارداتیں ہیں لیکن کمسن بچیوں کے ساتھ اس قسم کی وارداتیں تمام ممالک میں ہو رہی ہیں۔
ترجمان سے ایک پریس رپورٹر نے ہندوستان اور پاکستان میںہونے والی ان وارداتوں کے حوالے سے پوچھا تھا کہ ا قوام متحدہ اس واردات کو روکنے کے لیے ان دونوں ملکوں کو کیا مشورہ دے گی۔ جس کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ اقوام متحدہ اور اس کے ادارے بچیوں اور خواتین کے ساتھ اس قسم کے حملوں کے حوالے سے معاشرہ کو پیغام دینے اور انہیں بیدار کرنے کی سمت کام کر رہے ہیں۔
تاہم انہوں نے کہا کہ کوئی بھی ملک اس قسم کی وارداتوں سے مبرا نہیں ہے۔ ہم سبھی ملکوں میں قسم کی وارداتیں رونما ہوتا سن رہے ہیں۔یاد رہے کہ گذشتہ دنوں دہلی میں ایک8ماہ کی بچی کے ساتھ اسی کے چچا زاد بھائی نے ریپ کیا تھا اور اس سے کچھ روز قبل پاکستان کے قصور میں ایک سات سال کی بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کر نے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔

Title: sex assault on infant girl in india pakistan heart breaking un | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply