کربلا میں کار بم دھماکہ، متعدد ہلاک و زخمی

کربلا: عراق کے شہر کربلا میں ایک کار بم دھماکہ میں کم از کم7افراد ہلاک اور20دیگر زخمی ہو گئے۔یہ دھماکہ وسطی کربلامیںکربلا کے گورنر عاقل التراہی کی رہائش گاہ کے قریب ہوا۔ جبکہ بغداد کے گرد و نواح میں دہشت گردانہ حملوں میں متعدد افراد ہلاک و زخمی ہوئے ۔
عراقی ذرائع نے بتایا کہ تیسرے شیعہ امام ،امام حسینؓ اور ان کے بھائی حضرت عباس کے مزارات سے محض5کلومیٹر کے فاصلہ پر ایک خود کش کار بمبار نے دھماکہ خیز مواد سے بھری اپنی کار دھماکہ سے اڑادی۔
تکفیری گروپ دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) نے جو جون2014سے عراق کے مغربی و شمالی حصوں میں دہشت پھیلانے کے لیے اس قسم کے دھماکے کرتے رہے ہیں اس دھماکہ کی ذمہ داری قبول کی ہے۔اس نے ایک بیان میں کہا کہ اسکے اس حملہ میں کم از کم30افراد ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔داعش نے یہ بھی کہا کہ اس نے عراقی حکومت کی فوج کے ساتھ مل کرلڑنے والی شیعہ ملیشیا کے اراکین کو نشانہ بنا کر یہ دھماکہ کیا ہے۔

عراق میں گذشتہ کچھ عرصہ سے تشدد میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔اقوام متحدہ کے امدادی مشن برائے عراق کے جاری کردہ تازہ اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ ماہ مئی کے دوران عراق میں تشدد، مسلح تصادموں اور دہشت گردانہ کارروائیوں میں867عراقی ہلاک اور 1459دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔

Title: several killed and wounded in car bomb blast in karbala | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply