ریاض اسلامی امریکی کانفرنس میں ایران مخالف موقف پر زیادہ تر مسلم ملکوں کو تشویش

نئی دہلی:ریاض میں منعقد کی جانے والی اسلامی، امریکی کانفرنس اور اس میں ایران کے خلاف سخت موقف اپنائے جانے کے بعد بہت سے ممالک فکر مند ہو گئے ہیں کیونکہ اس اجلاس میں سب اسلامی ممالک کا ایران کے خلاف اتحاد بنانے کی کو شش کی گئی ہے اور مسلمانوں کو اسرائیل کی بجائے ایران ایک بڑے خطرے کے طور پر پیش کیا جا رہا ہے۔اب پاکستانی سیاسی اور عسکری قیادت بھی اس حوالے سے غور وفکر کر رہی ہے کہ اس حوالے سے پہلے تسلی حاصل کر لی جائے کہ یہ اتحاد فقط دہشت گردی اور انتہاپسندی کے خلاف ہی بنایا گیا ہے۔
ایکسپریس ٹریبیون کی رپورٹ کے مطابق ریاض کانفرنس کے بعد پاکستان نے اصولی فیصلہ کیا ہے کہ اس اتحاد میں فقط اسی صورت میں شامل رہیں گے کہ یہ فوجی اتحاد واقعتاً دہشت گردی کے خلاف ہو گا اور اس میں حتمی شمولیت کا فیصلہ بھی شرائط و ضوابططے ہو جانے کے بعد کیا جائے گا۔اعلیٰ حکام کے مطابق اس اتحاد کے قواعد و ضوابط اس اتحاد میں شامل ممالک کے وزرا دفاع کی ملاقات میں طے کئے جایئں گے اور پاکستان اگلے چند ہفتوں میں منعقد ہونے والے اجلاس میں اپنی تجاویز پیش کرے گا۔
پاکستان وزرا دفاع کے اجلاس میں اس بات کا مطالبہ کرے گا کہ اس اتحاد کا اصل مقصد یعنی دہشت گردی کے خلاف جنگ کو واضح طور پر مقدم رکھا جانا چاہیئے، اور اگر اس کے علاوہ کوئی ہدف رکھا گیا تو اس سے مسلم دنیا مزید انتشار کا شکار ہو جائے گی۔ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کسی بھی ایسے اتحاد میں شامل نہیں ہو گا، جس میں ایران یا کسی دوسرے مسلمان ملک کو نشانہ بنانا مقصود ہو۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Several countries express concern over anti iran position in riyadh american islami conference in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply