افغانستان میں داعش کے سات انتہاپسندوں کا یک گروپ ہتھیار ڈال کر امن عمل میں شامل

کابل: سات انتہا پسندو ںکے ایک گروپ نے جس میں دہشت پسند گروہ دولت اسلامی فی العراق و الشام (داعش) کے بھی کچھ کارکن ہیں افغانستان کے مشرقی کونار صوبہ میں امن عمل میں شامل ہو گئے۔مشرق میں افغان فوج کی 201ویں سیلب کور کے مطابق انتہاپسندوں نے تشدد ترک کر دیا ہے اور ونات ویگل علاقہ میں امن عمل میں شمولیت اختیار کر لی ہے۔ذریعہ نے مزید بتایا کہ انتہاپسندوں نے امن عمل میں شامل ہونے سے پہلے ایک پی ایم کے مشین گن اور چھ اے کے47رائفلیں افغان فوجیوں کو سونپ دیں ۔مشرقی افغانستان میں کونار نسبتاً کمزور صوبوں میں سے ایک ہے۔جہاں طالبان انتہاپسند اور دہشت گرد بشمول داعش انتہاپسند آزادی سے دندناتے پھر رہے ہیں۔دریں اثنا 201ویں سیلب کور نے کہا کہ مصالحت اور امن کے لیے دروازے ہمیشہ کھلے رہیںگے لیکن ساتھ ہی اس پر بھی زور دیا کہ جو غیر ملکی عناصر کے اکسانے پر تخریب کاری کریں گے انہیں صفحہ ہستی سے مٹادیا جائے گا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Seven militants including isis members join peace process in kunar in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply