ہتھکڑی لگے سماجی کارکن کو زدو کوب کرنے پر ہانگ کانگ میں 7پولس اہلکاروں کو2سال کی قید

ہانگ کانگ: ہانگ کانگ کی ایک عدالت نے 2014 میں بڑے پیمانے پر ہوئے جمہوریت کے حامی احتجاج کے دوران ہتھکڑی لگے ایک سماجی کارکن کو زدو کوب کے معاملے میں سات پولیس اہلکاروں کو دو سال قید کی سزا سنائی ہے۔ 15 اکتوبر 2014 کو ہوئی پولیس بربریت کے اس واقعہ کے خلاف لوگوں نے شدید غم و غصہ ظاہر کیا تھا۔ قریب 79 دنوں تک چلے احتجاج کی وجہ سے اقتصادی مرکز ہانگ کانگ کے بڑے حصے میں کام کاج ٹھپ ہو گیا تھا۔
احتجاج کی وجہ سے کئی دہائیوں سے راج کر رہے چین کے کمیونسٹ پارٹی رہنماؤں کے سامنے بھی سب سے بڑا سیاسی چیلنج پیدا ہو گیا تھا۔ پولیس اہلکاروں پر الزام ہے کہ وہ جمہوریت کے حامی کین سانگ کو ہتھکڑی پہناکر مظاہرے کی جگہ کے قریب ایک تاریک کونے میں لے گئے اور لات اور گھوسو سے تب تک پٹائی کی، جب تک کہ وہ زمین پر نہیں گر گیا۔
عدالت کے جج ڈیوڈ ڈفٹان نے پولیس اہلکاروں کو حملے کے لئے مجرم ٹھہرایا اور انہیں سزا سناتے ہوئے کہا کہ پولیس حکام نے ہانگ کانگ پولیس فورس کی شبیہہ خراب کی ہے کیونکہ یہ واقعہ پوری دنیا میں دیکھا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس حملے کا کوئی جواز نہیں تھا۔

Title: seven hong kong police sentenced to jail over beating of activist | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply