اسکاٹ لینڈ کی عدالت عظمیٰ نے پارلیمنٹ معطل کرنے کا بورس جانسن کا فیصلہ غیر قانونی قرار دیا

لندن : اسکاٹ لینڈ کی عدالت عظمیٰ نے رولنگ دی ہے کہ پارلیمنٹ کا پانچ ہفتہ کے لیے معطل کرنے کابرطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کا فیصلہ غیر قانونی ہے۔تقریباً70اراکین پارلیماں نے اسکاٹ لینڈ کی عدالت میں اپیل دائر کی تھی کہ کسی جج سے فیصلہ دلوایا جائے کہ پارلیمنٹ کا اجلاس ملتوی کرنے کا بورس جانسن کا فیصلہ غیر قانونی ہے۔جج لارڈ دوہتری نے ابتدا یں معطلی کو چیلنج کرنے والی درخواست یہ کہتے ہوئے خارج کر دی تھی کہ یہ سیاست دانوں کامعاملہ ہے عدالت اس پر کوئی فیصلہ نہیں سنا سکتی۔لیکن اسکاٹ لینڈ کی سپریم سول کورٹ کی تین ججی بنچ لارڈ دوہتری کے فیصلہ سے متفق نہیں تھی ۔ان تینوں ججوں نے فیصلہ میں کہا کہ مسٹر جانسن کا ملکہ ایلزبتھ کو یہ مشورہ دینا کہ پارلیمنٹ کا اجلاس14اکتوبر تک ملتوی کر دیا جائے غیر قانونی ہے کیونکہ اس کا مقصد پارلیمانی امور کی انجام دہی میں روڑے اٹکانا ہے۔اسکاٹ لینڈ کی نیشنل پارٹی کی ممبر پارلیمنٹ جوانا چیری نے ٹوئیٹر کے توسط سے کہا کہ ہم اسکاٹ لینڈ کی عدالت عظمیٰ سے یہ فیصلہ لینے والی اپنی قانونی ٹیم اور اپنے تمام حامیوں سے اظہار تشکر کرتے ہیں کہ انہوں نے اس معاملہ میں ہمارا ایسا ساتھ دیا۔ جوانا نے مزید کہا کہا کہ پارلیمنٹ کا اجلاس فی الفور طلب کیا جائے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Scottish court rules johnsons suspension of parliament was unlawful in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.