یمن کے ایک ہوٹل پر فضائی حملہ میں100 شہری ہلاک

دبئی: یمن کے دارالحکومت صنعا میں بدھ کے روز ایک ہوٹل کو نشانہ بنا کرکئے گئے فضائی حملے میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر100 ہو گئی ہے۔ جائے حادثہ پر موجود ایک عینی شاہد نے بتایا کہ دارالحکومت صنعا سے 20 کلومیٹر دور جائے حادثہ پر دھماکے کے بعد ہوٹل کی چھت گر گئی ۔ ایمرجنسی کارکن یحییٰ حسین نے دعویٰ کیا کہ یہ فضائی حملہ سعودی عرب کی قیادت والے فوجی اتحاد نے کیا ہے۔ واقعہ کے وقت ہوٹل میں حوثی قبائل کے تقریباً 100 افراد موجود تھے۔ طبی ٹیم کوجائے حادثہ سے 35 مختلف لوگوں کی لاشیں اور جسم کے مختلف اعضا پڑے ملے۔
عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اس حملہ میں ہوٹل میں موجود کوئی شخص زندہ نہیں بچا ہے۔ لوگ اب بھی ہوٹل کے ملبہ میں دبے ہوئے ہیں۔ واضح ر ہے کہ باغی گروپ حوثی اور یمن کی بین الاقوامی تسلیم شدہ حکومت کے درمیان تنازعہ چل رہا ہے۔ان باغیوں کا شمالی یمن اور صنعا پر کنٹرول ہے۔ یمنی حکومت کو سعودی عرب اور اتحادی ممالک کی حمایت حاصل ہے۔ اب تک یہ واضح نہیں ہو سکاہے کہ مرنے والوں میں کتنے شہری یا باغی شامل ہیں۔ اس ضمن میں متضاد رپورٹیں سامنے آرہی ہیں۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ یہ کسانوں کی لاشیںہیں جبکہ حکام کا کہنا ہے کہ ان میں باغیوں کی بھی لاشیں ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi led airstrikes on yemen hotel kill at least 100 in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply