لبنانی وزیر اعظم حریری کو قیدی بنانے کا صدر فرانس کا الزام جھوٹ پر مبنی: سعودی وزارت خارجہ

دوبئی: سعودی عرب کی وزارت خارجہ میں ایک ذریعہ نے کہا ہے کہ فرانس کے صدر ایمنوئیل مارکون کا حالیہ بیان کہ سعودی حکومت نے نومبر میں لبنانی وزیر اعظم سعد الحریری کو قیدی بنا لیا تھا غلط ہے۔

اور اس میں دور دورتک کوئی سچائی نہیں ہے۔ذریعہ نے مزید بتایا کہ سعودی عرب تمام دستیاب ذرائع سے لبنان کی حمایت جاری رکھے گا۔انہوں نے کہا کہ اب تک جو شواہد ملے ہیں وہ اس امر کی غمازی کر رہے ہیں کہ ایران اور اس کی پراکسی ریشہ دوانیاں اور درپردہ کارروائیاں لبنان اور خطہ کو غیر مستحکم کر رہی ہیں۔

اس ضمن میں انہوں نے سابق وزیر اعظم رفیق الحریری کے قتل میں ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ کےملوث ہونے اور اندرون ملک دو فرانسیسیوں کے قتل کا ذکرکیا نیز یہ بھی کہا کہ وہ حوثی ملیشیا کی بھی پشت پناہی کر رہا ہے۔

ذریعہ نے مزید بتایا کہ سعودی عرب ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا سے نمٹنے میں فرانسیسی صدر کے ساتھ کام کرنا جاری رکھے گا۔واضح رہے کہ حریری نومبر میں سعودی عرب گئے تھے اور وہاں پہنچتے ہی انہوں نے جان کو خطرہ بتاکر وزیر اعظم کے عہدے سے استعفےٰ دینے کا اعلان کر دیا تھا۔انہوں نے عالم عرب میں ایران اور حزب اللہ کی مداخلت کو اپنے استعفے کا باعث بتایا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi fm macrons comments on lebanons hariri being detained in ksa false in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply