حج کو سیاست سے خلط ملط نہ کیا جائے:عازمین حج کو سعودی عرب کا انتباہ

ریاض: سعودی عرب نے اس مبینہ دھمکی کی روشنی میں کہ اس سال ایرانی عازمین حج گڑبڑ کر سکتے ہیں عازمین حج کو انتباہ دیا ہے کہ وہ فریضہ حج کی ادائیگی کے دوران مذہب و اورسیاست کو خلط ملط نہ کریں۔

خادم حرمین شریفین و فرمانروائے سعودی عرب شاہ سلمان بن عبد العزیز کی صدارت میں سعودی کابینہ کے اجلاس میں عازمین کو تلقین کی کہ مقدس مقامات روحانیت اور تقدس کا لحاظ رکھیں اور سیاست نہ کریں۔

سعودی عرب کا یہ انتباہ ایران کے رہبر اعظم علی خامنہ ای کی گڑبڑ کرنے کی ڈھکی چھپی دھمکی اور ایرانی عازمین حج کے ذریعہ ممکنہ سیاسی مظاہروں کی روشنی میں دیا ہے۔

خامنہ ای نے کہا تھا کہ ”سب سے فاش غلطیاں تو یہ ہیں کہ جو وہ کہتے ہیں کہ حج کو سیاسی رنگ نہ دیں“۔ ”اتحاد قائم کرنا سیاسی معاملہ ہے، اسلامی تعلیمات و بندشوں کی حدود میں رہ کر فلسطین اور یمن کو عوم کی طرح عالم اسلام میں جبرو استبداد کے شکار لوگوں کی حمایت و دفاع کرنا سیاسی معاملہ ہے“۔

آیت اللہ نے کہا کہ حج ایک سیاسی عمل ہے اوریہ سیاسی عمل ایک مذہبی فریضہ ہے“۔ایرانی رہبر اعلیٰ نے یہ بھی کہا کہ حج کے موقع پر سعودی عرب کے حفاظتی انتظامات نہایت سخت ہوتے ہیں۔

سعودی حکومت کو زیادہ ذمہ داریاں اٹھانا پڑتی ہیں۔ ان کی ذمہ داریوں میں عازمین حج کا تحفظ اور سلامتی شامل ہے لیکن انہیں سلامتی کے ماحول کے حوالے سے خوفزدہ اور ہراساںنہیں کرنا چاہیے۔

عازمین حج چونکہ اللہ کے مہمان ہوتے ہیں اس لیے ملکہ اور مدینہ میں عازمین کے ساتھ حسن سلوک، ان کا احترام، ان کی مناسب دیکھ ریکھ اور ان کی عزت و توقیر کرنی چاہیے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi cabinet warns hajj pilgrims not to mix politics with religion in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.