علاقائی استحکام کی خاطر امریکی فوج کی شام میں موجودگی ضروری:سعودی ولیعہد شہزادہ بن سلمان

لندن : داعش کے خلاف جنگ پوری ہوجانے کے بعد شام سے امریکی فوجی انخلا کے امریکی صدر ڈونالڈٹرمپ کے تازہ ترین اعلان کے باوجود سعودی عرب کے ولیعہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا ہے کہ شام میں امریکی فوجوں کو موجود رہنا چاہیے۔
شہزادہ بن سلمان نے ٹائم میگزین کو ایک انٹرویو میں کہا کہ خطہ میں ایرانی اثر و رسوخ کو محدود کرنے کا واحد علاج شام میں امریکی کوجودگی کا ہونا ہے۔
سعودی ولی عہد نے مزید کہا کہ شام میں امریکی فوجوں کی موجودگی سے اس جنگ زدہ ملک کے مستقبل کے حوالے سے امریکہ کو اپنی بات کہنے کا موقع حاصل رہے گا۔
شام کے صدر بشار الاسد کے مستقبل کے حوالے سے استفسار کیے جانے پر شہزادہ بن سلمان نے کہا کہ وقتی طور پر وہ صدر کے عہدے پر فائز رہ سکتے ہیں لیکن ان کے حق میں یہی بہتر ہوگا کہ وہ شام میں ایران کو من مانی نہ کرنے دیں۔
انہوں نے انتباہ دیا کہ ایران اور اسکی ملیشیا خطہ میں ایران کا ایک ایسا سڑک راستہ کھولنے پر کام کر رہے ہیں جو عراق ، شام اور لبنان کے راستے تہران کو بحیرہ روم سے جوڑے گا۔

Title: saudi arabias crown prince us must stay in syria for regional stability | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply