سعودی عرب نے لاپتہ صحافی خاشوقجی کی موت کا اعلان کر دیا

جدہ: سعودی عرب نے ہفتہ کے روزلاپتہ صحافی جمال خاشوقجی کی موت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ابتدائی تحقیقات سے علم ہوا ہے استنبول میں واقع سعودی قونصل خانہ میں ہاتھا پائی کے دوران خاشوقجی کی مو ت واقع ہو گئی تھی۔

سعودی پریس ایجنسی نے سرکاری استغاثہ کے حوالے سے کہا کہ استنبول میں سعودی قونصل خانہ میں خاشوقجی اور مملکت کے حکام کے درمیان بحث ہو گئی جس میں نوبت مارپیٹ تک پہنچ گئی اور خاشوقجی مارا گیا۔استغاثہ نے مزید کہا کہ خاشوقجی کے قتل کے الزام میں 18سعودیوں کو گرفتار کر لیا گیا۔اور تحقیقات کی جارہی ہیں۔

ایجنسی نے مزید کہا کہ سعودی مملکت نے اس افسوسناک واقعہ پر گہرے تاسف کا اظہار کیا ہے اور عوام کے سامنے تمام حقائق لانے اور اس کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا عہد کیا ہے۔ خشوقجی ،جو ایک سعودی شہری ہے اور واشنگٹن پوسٹ کے کالم نویس تھے اور سعودی ولیعہد شہزادہ بن سلمان کی پالیسیوں پر تنقید کرتے رہے تھے،اپنی شادی کے لیے سرکاری دستاویزات حاصل کرنے 2اکتوبر کو استنبول میں واقع سعودی قونصل خانہ گئے تھے اور اسی کے بعد سے ہی وہ لاپتہ تھے۔

ترک حکومتی ذرائع نے کہا تھا کہ ترک پولس کو یقین ہے کہ سعودی صحافی کو15سعودی افسروں کی ایک خصوصی ٹیم نے جسے اسی مقصد کے لیے استنبول بھیجا گیا تھا قتل کیا تھا۔لیکن سعودی عرب کا کہنا تھا کہ خشوقجی بحفاظت قونصل خانہ سے چلا گیا تھا۔

سعودی معرب نے اعلان کیا ہے کہ جمال خاشقجی کے قتل کے معاملہ میں مملکت کے ڈپٹی انٹیلی جنس چیف احمد العسیری اور شاہی عدالت کے میڈیا ایڈوائزر سعود القحطانی ، جو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے بہت قریبی ساتھی تھے سمیت18افراد کو برطرف و گرفتار کر لیا گیا ۔جن تین دیگر انٹیلی جنس افسران کو بھی برطرف کیا گیا ہے وہ محمد بن صالح الرمیہ، عبداللہ بن خلیفی اور رشاد بن حامد المحمدی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi arabia says missing journalist jamal khashoggi is dead in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply