سعودی عرب : کرپشن الزامات میں گرفتار مزید دو شہزدے رہا

ریاض: (ایجنسی) سعودی عرب میںکرپشن کے الزامات میں گرفتار مزید 2شہزادوں کو رہا کر دیا گیا۔ژن ہوا نیوز کے مطابق سعودی عرب کے اٹارنی جنرل نے حکومت سے مالیاتی معاہدوں کے بعد شہزادہ مشال بن عبداللہ اور شہزادہ فیصل بن عبداللہ کی رہائی کی منظوری دی۔ذرائع کے مطابق اٹارنی جنرل نے ان کے تیسرے بھائی ترکی بن عبداللہ کی رہائی کا فیصلہ اب تک نہیں کیا ہے۔
خیال رہے کہ رواں سال نومبر کے آغاز میں سعودی حکومت کی جانب سے کرپشن کے خلاف تاریخ کی سب سے بڑی کارروائی کے تحت شہزادوں، وزرا اور ارب پتی تاجروں سمیت درجنوں افراد کو گرفتار اور برطرف کیا گیا تھا۔ اس کے کچھ روز بعد نومبر ہی کے مہینے میں درجنوں شہزادوں، کاروباری افراد اور حکومتی عہدیداروں سمیت تقریباً 200 افراد کو حراست میں لیا گیا تھا اور کریک ڈاؤن کے دوران 2 ہزار سے زائد بینک اکاؤنٹس منجمد کیے گئے۔
سعودی وزارت اطلاعات نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ’اب تک 208 افراد کو سوال و جواب کے لیے طلب کیا گیا، جن میں سے 7 کو بغیر کسی الزام کے رہا کردیا گیا۔‘ کرپشن کے الزام میں گرفتار کیے جانے والے ان افراد کو دارالحکومت ریاض کے پرتعیش ’رِٹز ہوٹل‘ میں حراست میں رکھا گیا تھا اور انہیں اپنے اثاثے اور نقد رقم حکومت کے حوالے کرنے کے عوض آزادی کی پیشکش کی گئی تھی۔
سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی ہدایت پر گرفتار ہونے والے شہزادوں، کاروباری افراد اور حکومتی عہدیداروں میں سے کئی افراد وقتاً فوقتاً رہا کیا جاتا رہا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi arabia releases 2 more princes in corruption case in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply