لبنانی سیاستدانوں نے سعودی فوجی امداد میں رکاوٹ کا ایک دوسرے کو مورد الزام ٹہرایا

ریاض: سعودی عرب لبنان کی صورت حال کا غائر مطالعہ کر رہا ہے جبکہ دوسری طرف 4بلین ڈالر کی سعودی امداد روکے جانے پرلبنانی سیاستداں ابھی تک ایک دوسرے کو مورد الزام ٹہرارہے ہیں۔حالت میں اس وقت ڈرامائی موڑ آگیا جب لبنان کے وزیر انصاف اشرف ریفیی نے یہ کہتے ہوئے لبنانی کابینہ سے استعفیٰ دے دیا کہ دہشت پسند گروپ حزب اللہ عرب ملکوں کے ساتھ لبنان کے رشتے خراب کر رہا ہے۔سعودی سفیر متعین لبنان علی اعواد اسیری نے الشرق الاوسط کے لیے جاری ایک بیان میںکہا کہ مملکت صورت حال پر نظر رکھے ہے لیکن کوئی نتیجہ اخذ کرنا قبل از وقت ہوگا۔اسیری نے مزید کہا کہ سفارت خانہ سعودی فیصلہ پر لبنانی ردعمل خاص طور پر غیر لبنانی غیر ذمہ دار میڈیا جو بے فیض ہیں، کا نہایت باریکی سے جائزہ لے رہا ہے۔اسیری نے کہا کہ اب تصویر صاف ہو گئی ہے ۔ ایک جانب کئی فریق لبنان کو تباہ کرنے پر تلے ہیں اور دوسری جانب کچھ فریق اس کی حفاظت کرنا چاہتی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi arabia keeps an eye on lebanon situation in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply