جاپان سے تعلقات سدھارنے کی کوشش میں پوتن جاپان پہنچے، جزیرے کا تنازعہ برقرار

ٹوکیو: روس کے صدر ولادمیر پوتن آج جاپان کے دورے پر پہنچے ہیں، جہاں وہ وزیر اعظم شنجو آبے سے ملاقات کے دوران باہمی رشتوں کو سدھارنے کی کوشش کریں گے۔ دونوں ممالک کے درمیان تنازعہ کی سب سے بڑی وجہ جاپان کے شمال میں واقع چار جزائز ہیں جسے دوسری عالمی جنگ کے دوران روس نے اپنے قبضے میں لے لیا تھا۔
اگر دونوں ممالک کے درمیان امن معاہدہ ہوتا ہے تو دوسری عالمی جنگ کو سرکاری طور پر ختم سمجھا جائے گا۔ ان متنازعہ جزائر کے نام جاپان میں کناشری، ایٹوروفو، شکوتان اور دی ہبومائی جزائر گروپ ہیں۔ روس میں ان جزائر کو جنوبی کرس کے طور پر جاناجاتا ہے۔ان جزائر پر جب روس نے قبضہ کیا تھا اس وقت تقریباً 17 ہزار جاپانی آبادی یہاں مقیم تھی لیکن جاپان کے خلاف روس کی جنگ کے اعلان کے بعد ان جزائر سے جاپانی آبادی نقل مکانی کر گئی۔ روس کی حکومت کے مطابق ان جزائر کی آبادی 12،346 افراد پر مشتمل ہے۔
یہ جزیرے روس کے تیل اور گیس پیداوار کے علاقوں کے قریب ہیں اور مستقبل میں یہ معدنی ذخائر کے بندرگاہ ہو سکتے ہیں۔ 2011 میں روس نے یہاں فوج کے ساڑھے تین ہزار جوانوں کو تعینات کیا تھا جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان تنازعہ مزید بڑھ گیا۔ روس کے وزیر دفاع سرگئی شوگوف نے گزشتہ مارچ میں کہا تھا کہ روس نے ان جزائر پر تعینات فوجی یونٹ کو سیلف پروپیلڈ توپ خانے، طیارہ شکن نظام، راکٹ توپ خانے اور سات درجن ٹینکوں کے ساتھ مضبوط بنایا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Russian leader putin heading to japan for territorial talks in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply