داعش کے خلاف جنگ قریب الختم ہے اس لیے اب ایرانی ملیشیا کوعراق سے چلے جانا چاہیے: امریکی وزیر خارجہ

ریاض/دوحہ:(رائٹر)امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے کہا ہے کہ چونکہ دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) مکمل طور پر مفتوح ہونے کے قریب ہیں اس لیے ایرانی غیر ملکی ملیشیا کو عراق سے چلے جانا چاہیے۔
سعودی عرب کے دارالخلافہ ریاض میں ایک پریس کانفرنس انہوں نے کہا کہ داعش کے خلاف جنگ اب چونکہ آخری مراحل میں ہے اس لیے عراق کی مدد کرنے والے ایران حامی لڑاکوں کو واپس لوٹ جانا چاہئے۔ مسٹر ٹلرسن کے اس بیان کو خلیجی ممالک پر ایران کے اثرات کو کم کرنے کی امریکی کوششوں کی شکل میں دیکھا جارہاہے انہوں نے یہ بھی کہا کہ جو دوسرے غیر ملکی جنگجو عراق میں موجود ہیں انہیں بھی واپس چلے جانا چاہئے،تاکہ عراق کے لوگ ان علاقوں پر دوبارہ کنٹرول حاصل کرسکیں جنہیں داعش کے قبضہ سے چھڑایا گیا ہے“۔
انہوں نے کہا کہ عراق سے غیر ملکی لڑاکوںکی واپسی ہوگی تب ہی وہاں کے شہریوں کی زندگیاں دوبارہ معمول پر آسکیں گی۔ سعودی عرب میں یہ بیان دینے کے بعد امریکی وزیر خارجہ قطر کی راجدھانی دوحہ پہنچے۔ جہا ں مسٹر ٹلرسن نے کہا کہ عراق میں داعش کا مقابلہ کرنے کیلئے کرد جنگجوؤںکو متحد ہونا چاہئے۔
عراق کے وزیر اعظم حیدرالعبادی کی حمایت کرتے ہوئے مسٹر ٹیلرسن نے کہا-”وزیر اعظم حیدرالعبادی کا اپنے ملک اور فوجی مہمات پر مکمل کنٹرول ہے۔انہیں اپنی آئینی ذمہ داریاں معلوم ہیں اور میں امید کرتا ہوں کہ آئین پر پوری طرح عمل ہوگا“۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rex tillerson iranian militias need to leave iraq in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply