چین کی وزارت مذہبی امور کی مذہبی انتہا پسندی روکنے کے لیے صوفی مسلک کی تشہیرکرنے کی اپیل

بیجنگ: چین کے مغربی شن جیانگ صوبے میں مذہبی کٹرپن اور علیحدگی پسندی کے جذبات ملک کی دوسری ریاستوں میں بھی پھیلنے لگے ہیں جسے روکنے کیلئے چینی صوفی مسلک کے پرچار کی اپیل کررہے ہیں۔
چین کے مذہبی امور انتظامیہ کے ایک اعلی افسر وان یوان نے چینی اسلامی ایسوسی ایشن کی نیشنل کانگریس نے کہا کہ شن جیانگ کے مذہبی کٹرپن کا جذبہ ملک کی دوسری ریاستوں میں بھی پنپ رہا ہے جسے روکنے کا راستہ اسلام کے صوفی نظریات کے پرچار کے ذریعے نکل سکتا ہے۔
انہوں نے کانگریس میں اپنے خطاب کے لئے تیار مقالے میں ان ریاستوں کا نام نہیں لیا جن میں کٹر اسلام کا نظریہ پھیل رہا ہے لیکن مذہبی امور کی نگرانی کرنے والے افسران اور مولویوں سے اپیل کی کہ وہ بنیاد پرستی کو پھیلنے سے روکنے کے لیے آگے آئیں۔ چین کے شن جیانگ کے تشدد میں اب تک سینکڑوں لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ شن جیانگ میں ایغور مسلمانوں کی آبادی ہے۔چین میں مسلمانوں کی آبادی دو کروڑ سے زیادہ ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Religious extremism is spreading to inland china in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply