ریفرنڈم سے حکومت میں فوجی مداخلت کا طویل باب بند ہو گیا:اردوغان

انقرہ / استنبول: یورپی ممالک کی جانب سے ترکی میں صدر کی ایگزیکٹو اختیارات کو بڑھائے جانے کے سلسلے میں ہونے والے ریفرنڈم پر تنقید کرنے کو صدر طیب اردوغان نے مغربی ممالک کی مبینہ’سماجی مصلح بننے کی ذہنیت‘ بتاتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ہے۔ اس سے پہلے ریفرنڈم میں فاتح ہونے کے بعد استنبول میں اپنی سرکاری رہائش گاہ میں مسٹر اردوغان نے کہا کہ ریفرنڈم کی کامیابی سے حکومت میں فوجی مداخلت کی ترکی کی طویل تاریخ کا باب ہمیشہ کے لئے بند ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ استصواب رائے کی موافقت میں ڈھائی کروڑ ووٹ آئے جو مخالف خیمے سے 13 لاکھ سے بھی زیادہ ہیں“۔ انہوں نے کہا، ”ترکی نے اپنی تاریخ میں پہلی بار اس طرح کے ایک اہم تبدیلی پر پارلیمنٹ اور لوگوں کی خواہش جاننے کا فیصلہ کیا ہے۔
ترکی جمہوریہ کی تاریخ میں پہلی بار ہم شہری حکومت کے ذریعے اپنی حکمرانی کے نظام کو تبدیل کر رہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ یہ بہت اہم ریفرنڈم ہے“۔ صدر اردگان نے تعریف کرتے ہوئے اس کو’تاریخی فیصلہ‘قرار دیا۔اردگان کا کہنا تھا کہ عوام کے ساتھ مل کر ہم نے اپنی تاریخ میں اہم اصلاحات لانے کا فیصلہ کیا ۔ جیت کا جشن منانے کے لیے لوگوں کی ایک بڑی تعداد ہاتھوں میں جھنڈے تھامے سڑکوں پر نکل آئی جبکہ دوسری جانب استنبول کے اردگان مخالف علاقے میں مظاہرین نے برتن اور مطبخ میں استعمال ہونے والی دیگر اشیا اٹھائے ہوئے منفرد انداز میں اپنی ناخوشی کا اظہار کیا جبکہ بیسکتاس اور کیدوکوئے میں بھی سیکڑوں افراد نے احتجاج کیا۔
اردگان کو ریفرنڈم میں کامیابی کے لیے بھاری ووٹ ملے لیکن ایجین اور بحیرہ روم کے ساحلی اور کردوں کے اکثریت والے علاقوں میں ریفرنڈم کے خلاف ووٹ دیا گیا۔قابل ذکر ہے کہ ریفرنڈم جیتنے کے بعد مسٹر اردوغان اب نئے قوانین کے تحت زیادہ سے زیادہ 2029 تک صدر رہ سکتے ہیں۔ ریفرنڈم کے نتائج کے ساتھ ہی آئینی تبدیلی کو منظوری مل گئی اور جدید ترکی کے بانی مصطفیٰ کمال اور عصمت انونو کے بعد کسی ترک حکمران کو اس قدر وسیع اختیارات حاصل ہوگئے۔ 1952 میں ناٹو میں شامل ہونے والے اور گزشتہ نصف صدی سے یورپین یونین میں شمولیت کی کوشش کرنے والے ملک ترکی پر ان نتائج کے اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Referendum put an end of the army interference says erdogan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply