پوم پیو سعودی عرب پہنچے،حملہ سرزمین ایران سے کیا گیا اور کروزمیزائلوں کا استعمال ہوا: امریکی عہدیدار

واشنگٹن :امریکہ اس نتیجہ پر پہنچا ہے کہ سعوی عرب کی تیل تنصیبات پر گذشتہ ہفتہ جو حملہ کیا گیا وہ سرزمین ایران سے کیا گیا تھا اور اس میں کروز میزائلوں کا استعمال کیا گیا تھا۔

امریکہ کے یہ بیانات ایسے وقت میں آئے ہیں جب امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پوم پیو ان حملوں کے بعد بڑھتی کشیدگی کے درمیان سعودی عرب پہنچے ہوئے ہیں۔

ایک امریکی عہدیدار نے ، جس نے اپنی شناخت ظاہرکرنے سے انکار کر دیا، کہا کہ امریکہ اس حملہ کے ثبوت اکٹھا کرنے میں لگا ہے جنہیں وہ آئندہ ہفتہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے ہونے والے اجلاس میں بین الاقوامی برادری خاص طور پر اپنے یورپی اتحادیوں کو پیش کرے گا۔

اس استفسار پر کہ امریکہ کو پورا یقین ہے کہ یہ میزائل سرزمین ایران سے ہی داغے گئے اس عہدیدار نے اثبات میں جواب دیا۔

اس عہدیدار نے کہا کہ امریکی انٹیلی جنس سروسز یہ جاننے کیصلاحیت رکھتی ہے کہ میزائل کہاں سے داغے گئے ۔تاہم انہوں نے حملے میں استعمال میزائلوں کی تعدادبتانے سے انکار کر دیا۔

صرف اتنا کہا کہ وہ مزید تفصیل میں نہیں جانا چاہتے۔ دوشنبہ کو امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بھی کہا تھا کہ یقینی طور پر یہ محسوس ہوتا ہے کہ اس حملہ میں ایران کا ہاتھ ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ امریکہ سعودی عرب کی مدد تو کرنا چاہتا ہےلیکن جنگ سے بھی گریز کرنا چاہتا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pompeo heads to saudi arabia as us official says aramco attacks came from iranian soil in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.