شام میں امریکی فضائی حملے میں سینیرالقاعدہ لیڈر ابو فراس الثوری ہلاک؟

واشنگٹن: پنٹاگان نے دعویٰ کیا ہے کہ شام میں ایک فضائی حملہ میں سینیر القاعدہ لیڈر ابو فراس الثوری اور دیگر دہشت گردوں کو نشانہ بنا یا گیا۔پنٹاگان کے پریس سکریٹری پیٹر کوک نے کہا کہ امریکی فوج نے اتوار کو جنوب مغربی شام میں یہ فضائی حملہ کیا جس میں دشمن کا زبردست جانی نقصان ہوا۔
اور کئی دہشت گرد مارے گئے۔کوک نے مزید کہا ” ہمارا قیاس ہے کہ جس اجتماع پر یہ بمباری کی گئی اس میں القاعدہ کا سینیر لیڈر ابو فراس الثوری بھی موجود تھا اور ہم اس کی ہلاکت کی تصدیق کرنے کی کوشش کر رہے ہیں“۔
تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ یہ ڈرون حملہ تھا یا فوج کے جنگی طیاروں نے بمباری کی تھی۔ انہوںنے کہا کہ الثوری ایک شامی ہے اور 1980کے اواخر اور1990کے عشرے کے دوران افغانستان میں جنگ لڑنے والے القاعدہ کا”رکن متروکہ“ ہے۔ اس نے دہشت گردوں کو تربیت دینے اور عالمی دہشت گردانہ حملے کرانے میں اسامہ بن لادن کے اور دیگر القاعدہ بانی اراکین کے ساتھ کام کیا ہے۔
واضح رہے کہ حکومت شام اور باغیوں کے درمیان 27فروری سے جنگ بندی ہے لیکن یہ جنگ بندی معاہدہ دولت اسلامیہ فی العراق وا لشام (داعش) اور النصرہ کا احاطہ نہیں کرتا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pentagon claims strike on senior al qaeda leader al suri in syria in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply