امریکی ڈرون حملے میں پاکستانی طالبا ن کے سربراہ ملا فضل اللہ کا بیٹا سمیت 26انتہا پسند ہلاک

کابل: افغانستان میں گذشتہ دو روز کے دوران امریکی ڈرون حملہ میں پاکستانی طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ کا بیٹا سمیت 26افراد ہلاک ہو گئے۔ ہلاک شدگان میں طالبان کے21اور دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے5 انتہا پسند شامل ہیں۔
پاکستانی انٹیلی جنس حکام نے اپنا نام صیغہ راز میں رکھنے کی شرط پر بتایاکہ ملا فضل اللہ کا بیٹا عبداللہ جو ایمان دیری کے نام سے بھی پکارا جاتا تھا، 6مارچ کو مشرقی صوبہ کونار کے چوگام علاقہ میں اس وقت ہلاک ہوگیا جب امریکی ڈرون طیارے نے افغان سرحد کے قریب واقع خود کش بمباروں کے تربیتی کیمپ کو نشانہ بنا کر دو میزائل داغے۔
اس حملہ میں پاکستانی طالبان کے دو علاقائی کمانڈر گل محمد اور استاد یٰسین بھی21 ہلاک شدگان میں شامل ہیں۔فضل اللہ کا بیٹا ایک ماہ کے اندر ڈرون حملوں میں ہلاک ہونے والی طالبان کی چوتھی بڑی اور اہم شخصیت ہے۔
مشرقی صوبہ ننگر ہار میں ایک فضائی حملے میں داعش کے کم از کم 5دہشت گرد ہلاک ہو گئے۔صوبائی پولس کمانڈمنٹ نے آج ایک بیان جاری کر کے تصدیق کی کہ یہ فضائی حملہ امریکی فوجوں نے بے پائلٹ فضائی گاڑی کا استعمال کر کے کیا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pakistani taliban chiefs son reported killed in u s drone strike in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply